ہیڈلائنز


ایرانی صدر کے بھائی کرپشن کے الزام میں گرفتار

Written by | روزنامہ بشارت

تہران: ایرانی صدر حسن روحانی کے چھوٹے بھائی حسین فریدوں کو کرپشن کے الزام میں گرفتار کر کے جیل منتقل کردیا گیا۔

ایرانی میڈیا کے مطابق حسن روحانی کے چھوٹے بھائی حسین فریدون کے خلاف مالی بے ضابطگیوں کا مقدمہ زیرسماعت ہیں اور انہیں اسی الزام میں گرفتار کیا گیا ہے۔

ایرانی عدلیہ کے نائب سربراہ غلام حسین محسنی نے موجودہ صدر کے بھائی کی گرفتاری پر میڈیا بریفنگ کے دوران کہا کہ ’’حسین فریدون سمیت دیگر افراد کے خلاف کرپشن میں ملوث ہونے سمیت متعدد مقدمات درج ہیں‘‘۔

انہوں نے کہا کہ مالی بے ضابطگیوں کے مقدمات کی تحقیقات جاری ہیں تاہم اس دوران کچھ افراد پر الزام بھی ثابت ہوا جنہیں سزا کے طور پر جیل منتقل کیا گیا جبکہ حسین فریدون عدالت سے قبل از گرفتاری ضمانت حاصل نہیں کرسکے اسی وجہ سے انہیں گرفتار کیا گیا۔

ایرانی عدلیہ کے نائب امیر کا کہنا تھا کہ ’’اگر حسن روحانی کے بھائی عدالت میں ضمانت کی درخواست دائر کریں گے تو قانون کے مطابق اُن کی درخواست پر فیصلہ کیا جائے گا تاہم ضمانت ہونے کی صورت میں انہیں رہا کیا جاسکتا ہے مگر اُن کے خلاف درج  کرپشن کے مقدمات کی تحقیقات جاری رہیں گی‘‘۔

واضح رہے حسن روحانی کے دورِ حکومت میں حسین فریدون اہم مشیر کا کردار ادا کرتے آئے ہیں تاہم ایک سال قبل جنرل انسپیکشن کے سربراہ نے صدر کے بھائی پر مالی بے ضابطگیوں کا الزام عائد کیا تھا جس کے بعد اُن کے خلاف تحقیقات کا آغاز کیا گیا۔

تازہ ترین خبریں

کالم / بلاگ