ہیڈلائنز


زبردستی کی شادی کے خوف سے گھر سے بھاگنے والی لڑکی پر سعودی عرب میں کیا بیتی ؟

Written by | روزنامہ بشارت

سعودی لڑکی دینا علی جبری شادی سے بچنے کے لیے ملک سے فرارہوکر فلپائن پہنچ گئی تاہم فلپائن میں حکام نے اسے روک لیا اور اسے زبردستی واپس سعودی عرب بھیج دیا گیا۔

میڈیارپورٹس کے مطابق سعودی عرب کی شہری دینا علی نامی اس سعودی شہری خاتون کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہو گئی جس میں وہ واپس سعودی عرب بھیجے جانے کی صورت میں اپنے اہل خانہ کے ہاتھوں قتل کر دیے جانے کے خدشے کا اظہار کر رہی ہیں۔ ہیومن رائٹس واچ نے منیلا ایئر پورٹ پر موجود ایک کینیڈین عینی شاہد کے حوالے سے بتایا کہ ایئر پورٹ حکام نے اس چوبیس سالہ خاتون کو سڈنی کی جانب روانہ فلائٹ پر سوار ہونے سے روک دیا۔سوشل میڈیا پر وائرل ہو جانے والی ایک ویڈیو میں دینا کا کہنا تھاکہ اگر میرے گھر والے آ گئے تو وہ مجھے قتل کر دیں گے۔ اگر میں واپس سعودی عرب گئی تو مجھے مار دیا جائے گا۔ پلیز میری مدد کریں۔انسانی حقوق کے لیے سرگرم تنظیمیں اور سوشل میڈیا صارفین دینا علی کی زندگی بچانے کے لیے اپیلیں کر رہے ہیں

تازہ ترین خبریں

کالم / بلاگ