ہیڈلائنز


میری والدہ کی عادت تھی بات بات پر محاورے سنانے کی:ریحام خان

Written by | روزنامہ بشارت

اسلام آباد: پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کی سابق اہلیہ اور اینکر پرسن ریحام خان ایک مرتبہ پھر پی ٹی آئی پر برس پڑیں اور لکھاکہ یہ ممکن نہیں کہ آپ سارا وقت سب لوگوں کو بیو قوف بنا سکیں۔
 کالم میں ریحام خان نے لکھاکہ ”میری والدہ کی عادت تھی بات بات پر محاورے سنانے کی۔ چار سے زائد زبانوں پر عبور رکھتی تھیں، اس لیے ہر موقع کی مناسبت سے محاورے ، شعر یا چپہ تیار ہوتا تھا۔ برٹش راج کے افسر کی بیٹی ہونے کی وجہ سے انگریزی کا استعمال ضرورت سے زیادہ ہو تا تھا۔ بچپن میں انگریزی کی ایک مثال بار بار دہرائی گئی لیکن آج کل مجھے زیادہ یاد آتی ہے وہ کچھ اس طرح ہے کہ آپ کبھی کبھی سب لوگوں کو بے وقوف بنا سکتے ہیں اورکچھ لوگوں کو سارا وقت بیوقوف بنا سکتے ہیں۔ لیکن یہ ممکن نہیں کہ آپ سارا وقت سب لوگوں کو بیو قوف بنا سکیں۔سیاسی پارٹیز اور حکومتوں کی طرف ایک نظر ڈالیں تو اگر چہ آج کل کے حالات بہت مایوس کن ہیں وہاں ایک بات جس سے مجھے کچھ تسلی بھی ملتی ہے اور تکلیف بھی وہ یہ ہے کہ یہ عوام ہے یہ سب جانتی ہے لیکن نہ جانے ناکام عاشق کی طرح مجبور ی کا لباس اوڑھے دیوداس کیوں بن بیٹھی ہے۔ 
اُنہوں نے لکھاکہ’ کچھ ہفتوں سے میںپاکستان کے سب سے زیادہ پسماندہ علاقوں میں وقت گزار رہی ہوں، جہاں جاتی ہوں پیاس ، اندھیرے اور بیماری دکھائی دیتی ہے اور ہر ایسی جگہ پر سیاسی جماعتوں کے پوسٹر بھی چسپاں نظر آتے ہیں۔اس پر قہریہ کہ مجھے بوڑھے جوان عورت مرد جب اپنی فریاد سناتے ہیں تو یہ ظاہر ہو جاتا ہے کہ وہ با شعور ہیں لیکن الیکشن کے وقت پھر سب بھول جائیں گے اور انہی دو تین چہروں میں سے کسی ایک کو پھر چانس دے دیں گے۔ ایسی باتیں سن کر میںسر پکڑ کر بیٹھ جاتی ہوں لیکن آگے سے جواب یہ ملتا ہے کہ بی بی ہم مجبور ہیں ہمارے پاس اور کوئی چوائس بھی تو نہیں ہے۔ اس مجبوری کا بھر پور فائدہ اٹھانے والے ہمارے سیاست دان کو دیکھیں کہ ایک دن ایک پارٹی دوسری پارٹی کی دھجیاں اڑائے گی کہ لازمی سروسز ایکٹ کیوں نافذ کیا گیا اور دودن بعد وہی پارٹی اپنے صوبے میںبلاجھجک وہی لازمی سروسز ایکٹ نافذ کر دے گی۔ ایک پارٹی تلملا اٹھی ہے جب ان کے قریبی رازداروں کے گریبان تک ہاتھ بڑھنے لگتے ہیں تو باقی تمام پارٹیز لطف انداز ہوتی ہیں۔ دوسری جانب جب احتساب کے دائر ے میں پارٹی لیڈرز کے نام آنے تک بات آجائے تو ایکٹ کو آنکھ جھپکتے میں ہی بدل ڈالا جاتا ہے۔ ابھی پرائم ٹائم سلاٹس کا کہاں جی بھرا تھا کہ وزیراعظم بھی اس کھیل میں کود پڑے ہیں۔ وزیراعظم نیب کو اور پی ٹی آئی کے چیئرمین احتساب کمیشن کو حسب ذائقہ آزادی دینے کے قاتل ہیں۔ دونوں جانب انڈسٹریلسٹ اور فنانسر کا لحاظ ہے۔ آخر میں یہی تو ہے جو ووٹ سے لے کر قومی ائیر لائن تک خرید سکتے ہیں۔ قصہ مختصر یہ کہ کوئی بھی پکڑائی نہیں دیتااور جہاں کوئی قانون آپ کے مطابق نہ ہو وہاں اس کو ہی اپنی ضرورت کے لیے ڈال و بدل دو‘۔

Clear

25°C

اسلام آباد

Clear
Humidity: 52%
Wind: W at 11.27 km/h
Thursday 23°C / 30°C Sunny
Friday 22°C / 30°C Sunny
Saturday 25°C / 30°C Sunny
Sunday 21°C / 30°C Sunny
Monday 23°C / 29°C Mostly sunny
Tuesday 24°C / 30°C Mostly sunny
Wednesday 23°C / 29°C Sunny

تازہ ترین خبریں

کالم / بلاگ