ہیڈلائنز


تفصیلات آنے کے بعد فیصلہ کرینگے کہ سعودی اتحاد میں کس حد تک شامل ہونگے، پاکستان

Written by | روزنامہ بشارت

اسلام آباد: پاکستان نے سعودی عرب کی زیر قیادت 34 اسلامی ممالک کے فوجی اتحاد کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس اتحاد کا حصہ بننے کے لئے حدود و قیود کی تفصیلات کا انتظار ہے۔ ترجمان دفتر خارجہ قاضی خلیل اللہ نے کہا ہے کہ پاکستان دہشت گردی اور انتہا پسندی کے خلاف 34 ملکوں کے اتحاد کا خیرمقدم کرتا ہے، اس اتحاد میں پاکستان کی شرکت کے لئے حدود و قیود کی تفصیلات کا انتظار ہے، پاکستان دہشت گردی اور انتہا پسندی کے خلاف جنگ میں عالمی اور علاقائی سطح پر ہر قسم کے تعاون کے لئے پُرعزم ہے۔ سعودی عرب کی زیر قیادت بننے والی فوجی اتحاد میں مصر، قطر ، عرب امارات، ترکی، بنگلا دیش اور ملائیشیا سمیت کئی افریقی مسلم ممالک شامل ہیں، تاہم ایران، شام ا ور عراق اس اتحاد کا حصہ نہیں۔ اس فوجی اتحاد کا آپریشن سینٹر ریاض میں ہوگا۔ سعودی عرب کے وزیر دفاع شہزادہ محمد بن سلمان کے مطابق اس فوجی اتحاد کے ذریعے عراق، شام، لیبیا، مصر اور افغانستان جیسے ممالک میں شدت پسندی کے خلاف کوششوں کو مربوط کیا جائے گا۔

دیگر ذرائع کے مطابق ترجمان دفتر خارجہ کے مطابق سعودی عرب کی جانب سے دہشت گردی کے خلاف بننے والے اسلامی فوجی اتحاد کا خیر مقدم کرتے ہیں۔ تفصیلات ملنے کے بعد فیصلہ کیا جائے گا کہ پاکستان کس حد تک عملی حصہ لے سکتا ہے۔ ترجمان کے مطابق پاکستان اور سعودی عرب کے درمیان قریبی دوستانہ تعلقات ہیں۔ پاکستان اور سعودی عرب کے درمیان دہشتگردی کے خاتمے کے حوالے سے دو طرفہ تعاون جاری ہے۔ واضح رہے گذشتہ روز سعودی عرب نے دہشتگردی کے خلاف 34 ملکی فوجی اتحاد کا اعلان کیا تھا، جس میں پاکستان کو اس اتحاد کا حصہ ظاہر کیا گیا تھا۔ اتحاد میں ترکی، پاکستان، ملیشیا، قطر، لیبیا، مراکش اور مصر سمیت کئی افریقی اور عرب ممالک شامل ہیں۔ اس سے قبل سعودی عرب نے یمن کے خلاف فوجی اتحاد میں بھی پاکستان کو اس اتحاد کا حصہ ظاہر کرچکا ہے۔

Clear

20°C

اسلام آباد

Clear
Humidity: 39%
Wind: NNW at 11.27 km/h
Wednesday 20°C / 29°C Sunny
Thursday 22°C / 29°C Sunny
Friday 22°C / 29°C Sunny
Saturday 21°C / 29°C Sunny
Sunday 21°C / 27°C Sunny
Monday 19°C / 25°C Scattered thunderstorms
Tuesday 18°C / 25°C Sunny

تازہ ترین خبریں

کالم / بلاگ