ہیڈلائنز


آرمی ایکٹ ترمیمی بل 2015ء منظور

Written by | روزنامہ بشارت

اسلام آباد: قومی اسمبلی نے آرمی ایکٹ میں ترمیم کا بل منظور کرلیا جس کے تحت ملزمان کی گرفتاری اور نظر بندی کو تحفظ ملے گا جب کہ قانون نافذ کرنے والے ادارے کے اہلکاروں کی کارروائی پر ان کے خلاف کوئی مقدمہ نہیں کیا جاسکے گا۔
قومی اسمبلی کا اجلاس اسپیکر ایاز صادق کی سربراہی میں ہوا جس میں پارلیمانی سیکریٹری چوہدری جعفر اقبال نے آرمی ایکٹ میں ترمیم کا بل پیش کیا جسے کثرت رائے سے منظور کرلیا گیا۔ بل کے مندرجات کے مطابق ملزمان کی گرفتاری اور نظر بندی کو قانونی تحفظ ملے گا، مسلح افواج یا قانون نافذ کرنے والے اداروں کی جانب سے پہلے سے حراست میں لیے گئے شخص کو گرفتار تصور کیا جائے گا اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کے اہلکاروں کے کسی اقدام پر کوئی مقدمہ یا ان کے خلاف کسی قسم کی کارروائی نہیں کی جاسکے گی۔ بل کے مطابق نئے قانون میں گواہان اور عدالتی کارروائی چلانے والوں کو بھی تحفظ دیا جائے گا۔
پیپلزپارٹی کے رہنما نوید قمر اور تحریک انصاف کی ترجمان شیریں مزاری نے بل کو انسانی حقوق کی خلاف ورزی قرار دیتے ہوئے اس کی مخالفت کی جس پر وزیر دفاع خواجہ آصف نے بل کا دفاع کرتے ہوئے کہا کہ بل کا مقصد ملزمان کی گرفتاری، نظر بندی اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کی قانونی کارروائیوں کو تحفظ دینا ہے۔
آرمی ایکٹ میں ترمیم کے بل کو سینیٹ سے پہلے ہی منظور کیا جاچکا ہے جس کی اب قومی اسمبلی سے بھی منظوری لی جاچکی ہے اور اب بل کو صدر مملکت کے پاس منظوری کے لیے بھیجا جائے گا جس کے بعد اسے قانونی حیثیت حاصل ہوجائے گی۔
واضح رہے کہ اس سے قبل سیکیورٹی فورسز کو تحفظ پاکستان ایکٹ کے ذریعے کسی بھی ملزم کو 90 روز کے لیے حراست میں رکھنے کا اختیار دیا جاچلا ہے۔

Clear

23°C

اسلام آباد

Clear
Humidity: 58%
Wind: WNW at 11.27 km/h
Thursday 23°C / 30°C Sunny
Friday 24°C / 31°C Sunny
Saturday 23°C / 31°C Sunny
Sunday 23°C / 31°C Sunny
Monday 23°C / 30°C Sunny
Tuesday 23°C / 29°C Sunny
Wednesday 23°C / 28°C Thunderstorms

تازہ ترین خبریں

کالم / بلاگ