ہیڈلائنز


بے نظیر بھٹو کی گاڑی کا سن روف ناہید خان کے کہنے پر کھولا گیا، ڈرائیور کا بیان

Written by | روزنامہ بشارت

راولپنڈی: انسداد دہشت گردی كی خصوصی عدالت نے سابق وزیر اعظم بے نظیر بھٹو قتل كیس میں ان كی گاڑی كے ڈرائیور جاویدالرحمان كا بیان ریكارڈ كر لیا جس میں ڈرائیور کا کہنا ہے کہ اس وقت گاڑی کا سن روف ناہید خان کے کہنے پر کھولا گیا۔ انسداد دہشت گردی كی خصوصی عدالت كے جج رائے محمد ایوب خان مارتھ نے سابق وزیراعظم بے نظیر بھٹو قتل كیس میں ان كی حادثے كا شكار گاڑی كے ڈرائیور جاویدالرحمان كا بیان ریكارڈ كر لیا جب کہ  گواہ سابق ایس پی اشتیاق حسین شاہ كو غیر ضروری قرار دیتے ہوئے ان كا بیان ترک كر دیا گیا اور سماعت14ستمبر تک ملتوی كرتے ہوئے مذید ایک گواہ ڈاكٹر پروفیسر اعظم یوسف كو بھی نوٹس جاری كر كے طلب كر لیا گیا ہے۔ عدالت نے وزارت خارجہ كو بھی ایک خط ارسال کیا ہے جس میں حكم دیا گیا ہے كہ مقدمے كے گواہ امریكی صحافی مارک سیگل كے ایک یا 2 اكتوبر كو وڈیو لنک سے بیان ریكارڈ كرانے پر رضامندی ظاہر كرنے اور اس كی بیماری کے حوالے سے بھیجی گئی ای میل کی کاپی بھی پیش کی جائے۔
سابق وزیر اعظم بے نظیر بھٹو کی گاڑی کے ڈرائیور جاوید الرحمان خان عدالت میں  بیان دیتے ہوئے بتایا كہ وہ عرصہ دراز آصف علی زرداری كے پاس ملازم ہے اور ڈرائیونگ بھی كرتا ہے، بے نظیر بھٹو كی ملک واپسی پر ان كے زیر استعمال تمام گاڑیاں وہ ہی چلاتا رہا ہے جب کہ لیاقت باغ میں 27 دسمبر كے جلسے میں  بینظیر بھٹو كو وہ ہی گاڑی میں لے كر گیا تھا اور جلسے كے اختتام پر واپسی كے لیے بے نظیر بھٹو كے علاوہ ان كے اس وقت كے سیكورٹی انچارج ایس ایس پی امتیاز احمد فرنٹ سیٹ پر بیٹھے تھے، پچھلی نشست پر بے نظیر بھٹو، مخدوم امین فہیم، ناہید خان بیٹھی تھیں۔
جاوید الرحمان نے عدالت کو بتایا کہ جونہی گاڑی لیاقت باغ كے گیٹ سے باہر نكلی تو عوام كا بڑا ہجوم ریلے كی شكل میں  سامنے آگیا وہ اس دوران گاڑی كے بمپر سے ریلے كو ہٹا كر راستہ بنانے كی كوشش كرتا رہا مگر ہجوم نہ ہٹا اور اس دوران ناہید خان نے بے نظیر بھٹو كو باہر نکل کر ہجوم کو ہاتھ ہلانے کا مشورہ دیا جب کہ ناہید خان نے فوری گاڑی كا سن روف كھولنے كی كوشش كی مگر ان سے وہ نہ كھل سكا جس پر انہوں نے بے نظیر بھٹو كے ملازم رزاق سے سن روف کھولنے کا كہا اور پھر ناہید خان نے ملازم کے ساتھ مل کر سن روف کھولا، ہجوم كی نعرے بازی كا جواب دینے كے لیے بے نظیر بھٹو گاڑی كے سن روف سے باہر نكلیں تواچانك فائر ہوا اور ساتھ ہی زور دار دھماکا بھی ہوگیا جس کے بعد بے نظیر بھٹو گاڑی میں گر پڑیں  جب کہ دھماکے سے ہماری گاڑی کے ٹائر پھٹ چکے تھے اور گاڑی کو بھی شدید نقصان پہنچا۔
جاوید الرحمان کا کہنا تھا کہ پھٹے ہوئے ٹائروں کے باوجود بے نظیر بھٹو کو اسپتال پہنچانا چاہتا تھا لیکن گاڑی کا چلنا انتہائی دشوار ہوگیا جس پر بے نظیر کو فوری طور پر دوسری گاڑی میں منتقل كر كے جنرل اسپتال پہنچایا گیا جہاں وہ پہنچتے ہی جاں بحق ہوگئیں۔

Clear

20°C

اسلام آباد

Clear
Humidity: 39%
Wind: NNW at 11.27 km/h
Wednesday 20°C / 29°C Sunny
Thursday 22°C / 29°C Sunny
Friday 22°C / 29°C Sunny
Saturday 21°C / 29°C Sunny
Sunday 21°C / 27°C Sunny
Monday 19°C / 25°C Scattered thunderstorms
Tuesday 18°C / 25°C Sunny

تازہ ترین خبریں

کالم / بلاگ