ہیڈلائنز


اسلحہ لائسنس 31 دسمبر تک کمپیوٹرائز کروانے کا حکم

Written by | روزنامہ بشارت

اسلام آباد: وفاقی حکومت نے فیصلہ کیا ہے کہ اگر پرانے مینول اسلحہ لائسنس 31 دسمبر 2015ء تک کمپیوٹرائزڈ نہیں کروائے گئے تو وہ منسوخ کر دیے جائیں گے۔ وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان کی زیرصدارت منعقدہ ایک اجلاس میں اسلحہ لائسنسوں کی تجدید کے لیے 31 دسمبر تک کی ڈیڈلائن دینے اور ممنوعہ بور کے اسلحہ سمیت بلٹ پروف گاڑیوں کے استعمال میں کمی لانے کا فیصلہ بھی کیا گیا ہے۔ اس اعلی سطحی اجلاس میں نئی اسلحہ پالیسی پر بھی غور کیا گیا۔ اجلاس میں طے پایا ہے کہ شہریوں کو 1973ء سے جون 2013ء تک جاری ہونے والے تمام مینول اسلحہ لائسنس لازمی طور پر کمپیوٹرائزڈ کروانا ہوں گے اور اس حوالے سے تاریخ میں توسیع نہیں کی جائے گی۔

حکومت کی جانب سے یہ فیصلہ کیا گیا ہے کہ پہلے مرحلے میں وزارت داخلہ کی جناب سے جاری کیے جانے والے 4 لاکھ اسلحہ لائسنس کی تجدید کے بعد انھیں کمپیوٹرائزڈ لائسنس سے تبدیل کر دیا جائے گا اور دوسرے مرحلے میں صوبوں کی جانب سے جاری ہونے والے اسلحہ لائسنس کو کمپیوٹرائزڈ کیا جائے گا۔ اجلاس کے دوران وزیرداخلہ نے ہدایات کی ہے کہ اسلحہ لائسنس کو کمپیوٹرائزڈ کروانے کے لیے نادرا عوام میں آگاہی کی باقاعدہ مہم شروع کرے۔ وفاقی دارالحکومت میں ہونے والے اجلاس میں یہ بھی طے پایا ہے کہ کسی بھی پاکستانی شہری جس کی عمر 25 سال سے کم ہو گی اسے اسلحہ لائسنس جاری نہیں کیا جائے گا۔

Clear

10°C

اسلام آباد

Clear
Humidity: 61%
Wind: NNW at 11.27 km/h
Wednesday 11°C / 18°C Sunny
Thursday 10°C / 18°C Partly cloudy
Friday 10°C / 20°C Mostly sunny
Saturday 12°C / 21°C Sunny
Sunday 14°C / 21°C Mostly sunny
Monday 12°C / 18°C Partly cloudy
Tuesday 12°C / 16°C Sunny

تازہ ترین خبریں

کالم / بلاگ