ہیڈلائنز


آمدن سے زائد اثاثے رکھنے سے متعلق ریفرنس کی سماعت

Written by | روزنامہ بشارت

وزیرخزانہ اسحاق ڈار کے خلاف آمدن سے زائد اثاثے رکھنے سے متعلق ریفرنس کی سماعت احتساب عدالت کے جج محمد بشیر کررہے ہیں۔

سماعت کے دوران استغاثہ کے دو گواہان طارق جاوید اور شاہد عزیزجنہوں نے عدالت کے سامنے اپنے بیانات قلمبند کرائے، طارق جاوید نجی بینک کے افسر جبکہ شاہد عزیز نیشنل انسویسٹمنٹ ٹرسٹ کے افسر ہیں۔

احستاب عدالت کے جج محمد بشیر نے سماعت کے دوران ریماکیس دیے کہ بے نامی دار کو نوٹس ہونا چاہیے، بے نامی دار کو علم تو ہو کہ اس کی جائیداد زیربحث ہے۔

اسحاق ڈار کے وکیل خواجہ حارث نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ ایسی کوئی جائیداد نہیں ہے اگر ایسے شواہد ملیں تو آپ بلا لیں۔

طارق جاوید نے عدالت میں کہا کہ 1999 سے البراکہ بینک سے وابستہ ہوں، نیب نے بینک کے ذریعے مجھے بلایا اور بینک نے مجھے نیب میں پیش ہونے کا کہا۔

انہوں نے کہا کہ مجھے کہا گیا اسحاق ڈار کی تصدیق شدہ بینک تفصیلات نیب کو فراہم کردیں جبکہ 17 اگست کو ایک اکاؤنٹ کی تفصیلات لے کر نیب گیا۔

وزیرخزانہ اسحاق ڈار کی اہلیہ کے بینک اکاؤنٹ کی تفصیلات عدالت میں جمع کرادی گئی۔

خواجہ حارث نے کہا کہ اکاؤنٹ 14 اکتوبر2000 کو کھولا گیا اور اکاؤنٹ میں2006 کےبعد کوئی ٹرانزیکشن نہیں ہوئی۔ نیب کے وکیل کی جانب سے کہا گیا کہ جمع کرائی گئی دستاویزات کے کچھ خالی صفحات پر نمبرنگ کی گئی۔

اسحاق ڈار کے وکیل نے کہا کہ کچھ صفحات پڑھنے کے قابل نہیں اوربعض کی ترتیب غلط ہے جس پر نیب کے وکیل نے کہا کہ کچھ صفحات جودستاویزات کا حصہ نہیں بن سکے وہ جمع کروا دیں گے۔

نیب پراسیکیوٹر کی جانب سے کہا گیا کہ پیش کی گئی دستاویزات کو بطورشہادت استعمال کیا جاسکتا ہے جس پرخواجہ حارث نے کہا کہ دستاویزات تصدیق شدہ نہیں بطورشہادت استعمال نہیں کی جاسکتیں۔

طارق جاوید نے کہا کہ ہجویری مضاربہ کے اکاؤنٹس3 افراد عبدالرشید، نعیم محبوب،ندیم بیگ آپریٹ کررہے تھے، نیب کوبینک اکاؤنٹس کی تفصیلات فراہم کردی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ہجویری ہولڈنگ پرائیویٹ لمیٹڈ کے بینک اکاؤنٹس کی تفصیلات بھی دے دیں، پہلا اکاؤنٹ تبسم اسحاق ڈار،دوسرا ہجویری مضاربہ جبکہ تیسرااکاؤنٹ ہجویری ہولڈنگ پرائیویٹ کےنام پرکھولاگیا۔

خواجہ حارث نے کہا کہ پیش کی گئیں دستاویزات گواہ نےتیارکیں نہ اس کی تحویل میں ہیں، اسحاق ڈار کے وکیل نے کہا کہ دستاویزات پر اعتراض ہے یہ دستاویزات تو کوئی بھی تیار کرسکتا ہے۔

احستاب عدالت کے جج محمد بیشر نے ریماکیس دیے کہ ایسی بات نہیں یہ بینک کی دستاویزات ہیں۔

اسحاق ڈار کے وکیل خواجہ حارث کی دونوں گواہان سے جرح جاری ہے۔

احتساب عدالت کے اطراف پولیس اور ایف سی کے 200 اہلکار تعینات ہیں اور عدالت جانے والے غیر ضروری راستوں کو بند ہیں جبکہ مسلم لیگ ن کے کارکنان کو عدالت کے اندر جانے کی اجازت نہیں۔

میڈیا نمائندگان اور وزرا کو بھی خصوصی اجازت نامہ دکھانے کے بعد ہی اندر جانے کی اجازت دی جا رہی ہے۔

وزیرخزانہ اسحاق ڈار وکیل خواجہ حارث کے ہمران عدالت میں موجود ہیں جبکہ مسلم لیگ ن کے رہنما دانیال عزیز، بیرسٹرظفراللہ، انوشہ رحمان سمیت طارق فضل چوہدری بھی احستاب عدالت میں موجود ہیں۔

Mostly cloudy

10°C

اسلام آباد

Mostly cloudy
Humidity: 54%
Wind: NW at 11.27 km/h
Friday 11°C / 19°C Partly cloudy
Saturday 11°C / 21°C Mostly sunny
Sunday 13°C / 20°C Partly cloudy
Monday 12°C / 18°C Sunny
Tuesday 11°C / 19°C Sunny
Wednesday 11°C / 17°C Sunny
Thursday 10°C / 18°C Sunny

تازہ ترین خبریں

کالم / بلاگ