ہیڈلائنز


70فیصد دیہات میں پرائمری تعلیم کی سہولیات نہیں

Written by | روزنامہ بشارت

قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف خورشید شاہ نے کہا ہے کہ سندھ میں اس وقت 60 ہزار تربیت یافتہ اساتذہ کی ضرورت ہے ، سندھ کے 70 فیصد دیہات میں پرائمری کی بنیادی تعلیم بھی صحیح طریقے سے نہیں دی جا رہی ہے ، جس بچے کو سال میں 850 گھنٹے پڑھنا چاہیے وہ 300 گھنٹے بھی نہیں پڑھ پاتا ہے تو وہ کیا کرے گا۔ایم کیو ایم کی جانب سے پیپلز پارٹی کے خلاف جاری وائٹ پیپر کو سورج کو آنکھیں دکھانے کے مترادف ہے ۔

 

قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف سید خورشید احمد شاہ نے سکھر کے پبلک سکول میں قائم امتحانی سینٹر کا دورہ کیا اس موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ 70 سالوں سے غریبوں کے لیے باتیں کر رہے ہیں مگر آج تک ان کے لیے کیا کچھ نہیں ہے۔ سندھ میں گھوسٹ سکولوں کی تعداد میں اضافہ ہو رہا ہے۔70فیصد ایسے تعلیمی ادارے ہیں جن میں اساتذہ کی تعداد پوری نہیں ، بعض تعلیمی اداروں میں چھت ہے نہ دیوار ، 5ہزار سے زائد سکول صرف کاغذوں کی حد تک محدود ہیں۔ سندھ میں نقل کلچر کے حوالے سے قائد حزب اختلات کا کہنا تھا کہ نقل کی روک تھام کے حوالے سے ایمرجنسی نافذ کی جانی چاہیئے۔ تمام صوبوں کے امتحانی مراکز میں نقل ہورہی ہے ہم چاہتے ہیں کہ ہمارا معاشرہ پڑھا لکھا ہو۔ نقل کرنے والا ایک فرد نہیں ہوتا بلکہ یہ مکمل مافیا بن چکا ہے۔کاپی کلچر زیرو ٹولرنس ہونا چاہئے۔

ایم کیو ایم کے وائٹ پیپر پر ان کا کہناتھا کہ وہ ہمارا منہ نہ کھلوائیں ایم کیو ایم تو خود منی لانڈرنگ میں پھنسی ہوئی ہے اور اس کے لوگ ملک سے باہر بھاگ گئے ہیں اور ارب پتی بن گئے ہیں وہ تو بھتے کے لیے فیکٹریوں تک کو آگ لگا دیتے ہیں اور اب یہ پیپلز پارٹی کی قیادت پر انگلیاں اٹھا رہے ہیں۔

Thunderstorms

29°C

اسلام آباد

Thunderstorms
Humidity: 68%
Wind: WNW at 6.44 km/h
Monday 24°C / 29°C Thunderstorms
Tuesday 23°C / 29°C Thunderstorms
Wednesday 23°C / 28°C Thunderstorms
Thursday 23°C / 28°C Thunderstorms
Friday 23°C / 28°C Thunderstorms
Saturday 23°C / 27°C Thunderstorms
Sunday 23°C / 26°C Thunderstorms

تازہ ترین خبریں

کالم / بلاگ