24 ویں آئینی ترمیم منظور، سپریم کورٹ کے فیصلے کو بھی چیلنج کیا جا سکے گا

Written by | روزنامہ بشارت

اسلام آباد: قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی میں اپوزیشن جماعتوں کی شدید مخالفت کے باوجود 24 ویں آئینی ترمیم کثرت رائے سے منظور کرلی۔ قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے قانون و انصاف کا اجلاس وفاقی وزیر قانون زاہد حامد کی سربراہی میں ہوا جس میں 24 ویں آئینی ترمیم کثرت رائے سے منظور کر لی گئی جس کے تحت سپریم کورٹ کے فیصلے کو بھی چیلنج کیا جا سکے گا۔ پیپلز پارٹی، تحریک انصاف اور جماعت اسلامی نے ترمیمی بل کی منظوری کی مخالفت کرتے ہوئے کہا کہ پاناما لیکس کا معاملہ حل ہونے تک بل کی منظوری روک دی جائے۔وفاقی وزیر قانون زاہد حامد نے اپوزیشن کو شدید تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ حکومت کو بچانے کے لئے آئینی ترمیم کی بات نامناسب ہے، اپوزیشن جماعتیں پہلے سو موٹو نوٹس پر اپیل کے اختیار کا کہہ کر اب اس کی مخالفت کر رہی ہیں۔


Read Basharat Online

روزنامہ بشارت ٹویٹر


Follow Daily_Basharat on Twitter
Clear

16°C

اسلام آباد

Clear
Humidity: 77%
Wind: NNW at 17.70 km/h
Clear

21°C

لاہور

Clear
Humidity: 50%
Wind: NNW at 22.53 km/h
Clear

23°C

کراچی

Clear
Humidity: 95%
Wind: WSW at 17.70 km/h
Clear

14°C

کوئٹہ

Clear
Humidity: 10%
Wind: SSE at 11.27 km/h
Clear

18°C

پشاور

Clear
Humidity: 54%
Wind: W at 11.27 km/h