ہیڈلائنز


پارلیمنٹ کا مشترکہ اجلاس، ارکان کی جانب سے بھارتی جارحیت کی مذمت

Written by | روزنامہ بشارت

اسلام آباد: مسئلہ کشمیر اور لائن آف کنٹرول پر بھارتی جارحیت کا منہ توڑ جواب دینے کے لیے پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس کے دوسرے روز بھی ارکان کی جانب سے تبادلہ خیال جاری رہا۔ اسلام آباد میں مشترکہ اجلاس کے خطاب کرتے ہوئے پیپلزپارٹی کے رہنما اعتزازاحسن کا کہنا تھا کہ ایسا قدم نہیں اٹھانا چاہئے کہ پارلیمانی جماعتوں کاپارلیمنٹ سے اعتماد اٹھ جائے، مسئلہ کشمیرپربداعتمادی کا مظاہرہ نہیں ہوناچاہئے، کشمیریوں کی ایک اورنسل پتھراٹھا کربندوقوں اورتوپوں کامقابلہ کررہی ہے جب کہ بھارت کشمیر میں تحریک سے بوکھلایا ہوا ہے اورسرجیکل اسٹرائیک کا ڈھونگ رچاکر پیچھے پر چلا گیا جب کہ سارک کانفرنس میں بھارت نے پاکستان کو تنہا کردیا جو دکھ کی بات ہے۔ اعتزاز احسن نے کہا کہ سندھ طاس معاہدے میں ترمیم بھارت کی جانب سے جنگی قدم ہوگا، مودی کی بوکھلاہٹ اپنی جگہ لیکن ہماری جانب سے بھی ناکامیوں کا ذکر ضروری ہے، یہ ناکامی وزیراعظم پاکستان کی ہے کیوں کہ وہ وزیرخارجہ بھی ہیں، حکومت غیرریاستی عناصر پر پابندی لگانے میں مکمل ناکام ہوئی ہے، نیشنل ایکشن پلان میں غیرریاستی عناصر پر پابندی کی شق شامل ہے اورجب تک غیرریاستی عناصر جلسے جلوس کرتے رہیں گے، الزامات بھی  لگتے رہیں گے۔ پشتونخواملی عوامی پارٹی کے سربراہ محمود اچکزئی نے اپنے خطاب میں کہا کہ ایوان متفقہ طورپرکہے کہ آئین کی بالادستی ہوگی اورپالیسیاں یہاں بنیں گی، ہم غلط پالیسی لے کرچل رہے ہیں کہ لیڈرایجاد کرو، جو سویلین یا فوجی آئین کا احترام کرے میں اس کو سلیوٹ کرتا ہوں جب کہ جو آئین کی پرواہ نہ کرے اس کے خلاف بغاوت نہ کرنا جرم ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ آج بھی افغانستان کی خودمختاری کا احترام نہیں کیا جارہا، آج بھی افغانستان میں مداخلت ہے، سول اور ملٹری بیوروکریسی سے درخواست کرتا ہوں افغانستان میں مداخلت نہ کی جائے۔ انہوں نے کہا کہ ایران کے صدر کو یہاں بلا کرناراض کیا گیا، ہندوستانی پارلیمنٹ کو قرارداد پاس کرنی چاہیئے کہ کشمیر کشمیریوں کا ہے اور ہماری اسمبلی بھی یہ قرارداد پاس ہونی چاہیئے کہ کشمیر کشمیریوں کا ہے جب کہ کشمیریوں کو پاکستان اور بھارت کے علاوہ تیسرا آپشن بھی دینا چاہیئے. سینیٹرالیاس بلورنے کہا کہ ہم دوسرے ملکوں کے معاملات میں بے جا مداخلت کرتے ہیں، اشرف غنی پاکستان آیا اور جی ایچ کیو بھی گیا، افغانستان کے ساتھ معاملات خراب کرنے سے ہم پختون مارے جائیں گے، آج افغانستان ہمارا دشمن بنا ہوا ہے جب کہ اس وقت ملک کی کوئی خارجہ پالیسی نہیں ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ ہم دنیا میں تنہا ہو چکے ہیں اور اب ملک میں غیرریاستی عناصرکوختم کیا جائے۔ پیپلزپارٹی کے رہنما نوید قمرنے مشترکہ اجلاس سے خطاب کے دوران کہا کہ کوئی دہشت گرد اچھا یا برا نہیں ہوتا، جو بھی دہشتگرد ہے اس کے خلاف کارروائی ہونی چاہئے،  دہشتگردی کا شکارملک دنیا کی نظرمیں دہشتگرد ہے اور تاریخ میں کبھی بھی غیرریاستی عناصر سے ہمیں فائدہ نہیں پہنچا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ ملکی سلامتی کے لئے ایک ہیں اور ایک رہیں گے لیکن ہم سب تو ایک ہیں لیکن دنیا ہم سے دور کیوں ہے پھر یہ کیوں ہے کہ ہم سچ پرہیں اوردنیا پھر بھی ہمارا موقف نہیں سن رہی، ہمارے سفارتی محاذ پراقدام کافی نہیں، دنیا پرباورکرائیں کہ کیا ہماری کامیابیاں اورکیا مسائل ہیں کیونکہ یہ وقت نکل جائے گا اور پھر ہمیں مستقبل میں مسائل کا سامنا ہوگا، سب سے زیادہ دہشت گردی کا شکارہم ہیں لیکن دنیا ہمیں ہی دہشت گرد سمجھتی ہے.

Clear

22°C

اسلام آباد

Clear
Humidity: 37%
Wind: WNW at 6.44 km/h
Friday 21°C / 28°C Sunny
Saturday 20°C / 29°C Sunny
Sunday 21°C / 28°C Sunny
Monday 21°C / 27°C Sunny
Tuesday 18°C / 26°C Sunny
Wednesday 19°C / 27°C Sunny
Thursday 20°C / 25°C Sunny

تازہ ترین خبریں

کالم / بلاگ