ہیڈلائنز


وزیر داخلہ نے نواز شریف کے اہم اتحادی کی آڑے ہاتھوں خبر لے لی

Written by | روزنامہ بشارت

فاقی وزیر داخلہ چودھری نثار نے اسمبلی کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا پہلے اللہ پھر ایوان کے سامنے جوابدہ ہوں۔ ڈھائی سال کے دوران سیکورٹی صورتحال میں بہتری آئی۔ ملٹری کورٹس کے معاملے پر پہلی بار آصف زرداری کی تعریف کی تھی۔ وزیر داخلہ کا مزید کہنا تھا ہماری حکومت سے پہلے روزانہ کئی دھماکے ہوتے تھے۔ سیکورٹی صورتحال بد سے بدتر کسی ایک دور میں نہیں ہوئی۔ پاکستان تو دور کی بات اسلام آباد تک ماضی میں محفوظ نہیں تھا۔
انہوں نے اپنے خطاب میں کہا ریڈ زون میں حملے ہوئے اور جی ایچ کیو پر حملہ 36 گھنٹے تک جاری رہا۔ پاکستان میں عراق سے بھی زیادہ دہشت گردی کے واقعات ہوئے۔ آج دھماکا ہو تو خبر بنتی ہے پہلے دھماکا نہ ہو تو خبر بنتی تھی۔ سیکورٹی صورتحال کی تبدیلی سول ملٹری بہتر تعلقات سے آئی۔ چودھری نثار نے کہا اے این پی، ایم کیو ایم اور پی پی کو طالبان کے ساتھ مذاکرات سے اختلافات تھے۔ مذاکرات کے دوران اندازہ ہو گیا تھا کہ ہم سے ڈبل گیم ہو رہی ہے۔ ایک طرف بات چیت دوسری طرف ہماری گلیاں محفوظ نہیں تھیں۔
وزیر داخلہ نے کہا غلط تاثر دیا گیا کہ فوج نے دہشتگردی کیخلاف زبردستی آپریشن شروع کیا۔ تمام جماعتوں کے اتفاق کے بعد ملٹری آپریشن شروع ہوا۔ آپریشن عوام اور سیاسی جماعتوں کی سپورٹ کے بغیر کامیاب نہیں ہو سکتا۔ ان کا مزید کہنا تھا طالبان سے مذاکرات کے معاملے پر تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان سے خود ملنے گیا۔ آوازیں کسنے کے بجائے ملکر دہشتگردی کے خلاف اقدامات کرنا ہوں گے۔ دہشتگردی کی کارروائیوں کو صفر پر لانے کیلئے ملکر کام کرنا چاہیے۔ وفاقی وزیر داخلہ نے اپنے خطاب میں مزید کہا بدترین لوگ آگ اور خون کی ہولی کھیل رہے ہیں۔ دہشتگرد سن لیں وہ ہمارا اتحاد نہیں توڑ سکتے۔ کل پارلیمنٹ سے جو آواز گئی وہ کسی اور ملک میں ہوتا تو قابل مذمت تھا۔ کل ایسے الفاظ استعمال ہوئے جو سیکورٹی ایجنسیز کے لئے تضحیک آمیز ہیں۔ کاش وہ را اور این ڈی ایس کیخلاف بھی بات کرتے۔

وزیر داخلہ نے کہا سانحہ کوئٹہ روٹین کا حملہ نہیں تھا ان کو پتا تھا حملے کے بعد سارے اکٹھے ہوں گے ۔ کوئٹہ سانحہ پر کچھ شواہد ملے ہیں۔ دو دفعہ نیشنل ایکشن پلان پر ایوان ، سینیٹ کو بریفنگ دے چکا ہوں۔ کریڈٹ حکومت کو نہیں ایوان کو دینا چاہتا ہوں ۔آئندہ چند مہینے فیصلہ کن مرحلے ہیں۔ فوجی عدالتیں مخالفین نہیں دہشت گردوں کیلئے بنائی گئیں۔

اس سے پہلے وزیر داخلہ چودھری نثار علی کا قومی اسمبلی میں اظہار خیال کرتے ہوئے کہا ساڑھے تین کروڑ شناختی کارڈز کی تصدیق ہو گئی 29 ہزار پاسپپورٹس کو منسوخ کئے ہیں۔ ہزاروں شہریوں کے فیملی ٹریز میں غیر ملکی شامل تھے۔ غیر ملکیوں نے جعلی پاسپورٹ بنوا رکھے تھے۔ شناختی کارڈز کی تصدیق قومی مہم تھی ۔ ایسے شخص کا شناختی کارڈ بھی پاکستان میں بنا جو ڈرون حملے میں مارا گیا۔ وزیر داخلہ نے کہا قومی سلامتی کی مہم کا جائزہ لینے کے لئے پارلیمانی کمیٹی بنائی جائے۔ ریکارڈ کی درستگی کے لیے پارلیمانی کمیٹی بھی بنائی جا سکتی ہے۔

Mostly sunny

17°C

اسلام آباد

Mostly sunny
Humidity: 40%
Wind: WNW at 11.27 km/h
Friday 11°C / 19°C Partly cloudy
Saturday 11°C / 21°C Mostly sunny
Sunday 13°C / 20°C Partly cloudy
Monday 12°C / 18°C Sunny
Tuesday 11°C / 19°C Sunny
Wednesday 11°C / 17°C Sunny
Thursday 10°C / 18°C Sunny

تازہ ترین خبریں

کالم / بلاگ