ہیڈلائنز

Reporter FK

Write on پیر, 20 نومبر 2017

کراچی :عالمگیر خان سٹی کورٹ پہنچے، پولیس کے رویئے سے دلبرداشتہ فکس اِٹ بانی نے نیا چیلنج ٹھکائی بھی فکس اِٹ والوں کے حوصلے پست نہ کر پائی۔کر ڈالا۔ پانی سے دھلائی اور ٹھکائی بھی فکس اِٹ والوں کے حوصلے پست نہ کر پائی۔
کراچی کی مقامی عدالت میں ساتھیوں اور اپنی ضمانت کے لئے آنے والے فکس اِٹ کے بانی عالمگیر خان پولیس رویئے پر پھٹ پڑے، کہتے ہیں ہم نے آئی جی کو اختیار دلوانے کیلئے جیلیں بھگتیں، ماریں کھائیں اور آج پولیس ہمیں ایف آئی آر کی کاپی تک نہیں دے رہی۔ عالمگیر نے سندھ حکومت کو چیلنج کرتے ہوئے کہا ہے کہ ان کی تحریک جاری رہے گی، روک سکو تو روک لو۔ عالمگیر خان کا کہنا تھا کہ وہ سندھ کے کرپٹ تعلیمی نظام کے خلاف جنگ کر رہے ہیں۔عدالت نے فکس اِٹ کے دیگر گرفتار کارکنوں کی فی ملزم پانچ ہزار روپے کے مچلکوں کے عوض ضمانت منظور کر لی۔ تاہم عالمگیر کی ضمانت غلط عدالت میں لگانے کے باعث مسترد ہو گئی۔ ضمانت مسترد ہونے کے بعد عالمگیر وکلاء کے ہمراہ سیشن کورٹ پہنچے جہاں ان کی 10 ہزار روپے کے عوض ضمانت منظور کر لی گئی۔

Write on پیر, 20 نومبر 2017

اسلام آباد:چیئرمین سینیٹ رضاربانی کا کہنا ہے کہ آئین کی بالادستی کیلئےقربانیاں دینےوالوں کیلئےکچھ نہیں کیاگیا، قومیں اپنےہیروز کی عزت سے ہی بنتی ہیں۔
تفصیلات کے مطابق چیئرمین سینیٹ رضاربانی نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آئین کی بالادستی کیلئےقربانیاں دینےوالوں کیلئےکچھ نہیں کیاگیا، قومیں اپنے ہیروز کی عزت سے ہی بنتی ہیں۔
رضاربانی کا کہنا تھا کہ صحافیوں کی قربانیاں نہ ہوتیں توشایدریاست بکھر چکی ہوتی، ادارےکمزور،سیاست افراتفری کاشکار ہو تو صحافیوں کا کردار سامنے آتا ہے۔
فیض آباد دھرنے کے حوالے سے چیئرمین سینیٹ نے کہا کہ 14دن سے ریاست بے بس ہے، کسی کے کان پرجوں تک نہیں رینگ رہی ، وفاق بچےگاتوہماری سیاست بھی ہوگی ، جنگجو معاشرے کو کنٹرول کریں گے تو کچھ نہیں بچے گا۔
انکا کہنا تھا کہ آج پاکستان کی سیاست پرحاوی ہونےکی کوشش ہورہی ہے، اشرافیہ اورعام آدمی پر قانون کےاطلاق کےالگ الگ طریقے ہیں۔
رضاربانی نے کہا کہ سب کا ایک جیسا احتساب ہوگا تو ہی قانون کی بالادستی ہوگی، پاکستان کوفلاحی ریاست بنانے کیلئے جدوجہد کی

Write on پیر, 20 نومبر 2017

اسلام آباد : لوگوں کو بار بار بیوقوف نہیں بنایا جاسکتا، شریف مافیا اپنے چھپائے پیسے بچانے کیلئے ہر حربہ استعمال کر رہے ہیں۔
تفصیلات کے مطابق پی ٹی آئی کے چیئرمین عمران خان نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے پیغام میں کہا ہے کہ عوام نوازشریف کے احتساب کے نعرے سے اکتا گئے ہیں، لوگوں کو بار بار بیوقوف نہیں بنایاجا سکتا۔
عمران خان کا کہنا ہے کہ عدلیہ کا کام قانون کی بالادستی قائم رکھنا ہے، توجہ احتساب سے ہٹانے کی کوشش آئین کی خلاف ورزی ہے، یہ سب عدلیہ کونقصان پہنچانے کی کوششوں کو ظاہر کرتی ہے نہ کہ دفاع کیلئے
پی ٹی آئی چیئرمین نے ایک اور ٹوئٹ میں کہا کہ شریف مافیا اپنے چھپائے پیسے بچانے کیلئے ہر حربہ استعمال کررہا ہے۔

Write on پیر, 20 نومبر 2017

سیالکوٹ :۔ سیالکوٹ کی سمبڑیال تحصیل کے جیتھکی گاؤں سے تعلق رکھنے والے حیدر علی، ان 15 افراد کے قتل کے بعد زندہ بچ جانے والے واحد فرد تھے جو غیر قانونی طریقے سے ایران جارہے تھے۔ غریب گھرانے سے تعلق رکھنے والا حیدر علی اس امید کے ساتھ باہر جانا چاہتا تھا کہ وہ اپنا اور اپنے خاندان کا مستقبل بہتر بنا سکے گا۔ اسی مقصد کی خاطر انہوں نے رواں ماہ اپنے دو دوستوں 17 سالہ ابو بکر اور 16 سالہ ماجد کے ہمراہ انسانی اسمگلروں کے ساتھ بد قسمت سفر کا آغاز کیا۔ انہوں نے اس مقصد کے لیے فی فرد ڈیڑھ سے 2 لاکھ روپے انسانی اسمگلروں کو ادا کیے تھے۔ حیدر علی کے والد محمد اسلم جو پیشہ سے مزدور ہیں، نے بتایا کہ ان کا بیٹا اور اس کے دو دوستوں کو انسانی اسمگلروں کی جانب سے بہکایا گیا۔ انہوں نے بتایا کہ انسانی اسمگلروں کی جانب سے بیرون ملک میں عیش و آرام کی زندگی کا وعدہ کیا گیا، ایجنٹس نے کہا کہ حیدر علی کو ایران کے راستے ترکی اور پھر گریس بھیجیں گے لیکن انہوں نے اپنا وعدہ پورا نہیں کیا۔ انہوں نے بتایا کہ جب انہوں نے تربت میں ابو بکر اور ماجد کے ظالمانہ قتل کا سنا تو ان کے خاندان پر قیامت ٹوٹ پڑی تھی، جمعرات کو علی نے اپنے خاندان کو فون کرکے بتایا کہ وہ زندہ ہے۔ حیدر علی نے فون پر بتایا کہ وہ کسی وجہ سے اس گاڑی میں رہ گئے تھے جس میں تمام لوگ جارہے تھے، انہوں نے اپنے خاندان کو بتایا کہ وہ جلد ہی گھر واپس آجائیں گے۔ محمد اسلم کا کہنا تھا اپنے اور اپنے اہل خانہ کے بہتر مستقبل کے لیے تین دوست ایک ساتھ بیرون ملک جانے کے لیے نکلے تھے، جن میں سے ابو بکر اور ماجد کی لاشیں جمعرات کو یہاں پہنچادی گئی جنہیں مقامی قبرستان میں سپر دخاک کیا گیا، انہوں نےکہا کہ شکر ہے کہ حیدر علی زندہ اور محفوظ ہے، انہوں نے مزید کہا کہ تمام اہل خانہ علی کی واپسی کا بے صبری سے انتظار کر رہے ہیں۔ قریبی دوست بلوچستان کی تحصیل بلیدا میں 15 افراد کے قتل کے بعد تربت کے علاقے تاجران سے مزید 5 افراد کی لاشیں ملیں، جو آپس میں قریبی دوست تھے۔ یہ لوگ گجرات کے دو گاؤں سے 18 روز قبل ایران کی سرحد کو پار کرنے کے لیے روانہ ہوئے تھے، ان افراد میں سے 4 کا تعلق کھوڑی راسل پور اور ایک کا تعلق کاسوکی سے تھا۔ مقتول افراد کے اہل خانہ کے مطابق ان لوگوں نے کھوڑی گاؤں کے ایک انسانی اسمگلر سجاد کو ایک لاکھ 60 ہزار روپے دیے تھے، جس نے وعدہ کیا تھا کہ وہ ان تمام افراد کو بلوچستان سے گزارنے کے بعد غیر قانونی طریقے سے ایران اور ترکی عبور کرنے کے بعد یورپ بھیجے گا۔ مقامی انتظامیہ نے ڈان کو بتایا کہ ان تمام افراد کی میتیں مقامی گاؤں میں پہنچادی جائے گئیں، جس کے بعد حکومت کی جانب سے ضروری انتظامات مکمل ہونے کے بعد ان کی نماز جنازہ اتوار 19 نومبر کو ادا کرنے کیے جانے کا امکان ہے۔ کاریاں والا پولیس کے مطابق کھوڑی راسل پور سے تعلق رکھنے والے مقتولین کی شناخت 23 سالہ دانش اعوان، 19 سالہ قاسم اعوان،18 سالہ ثاقب، 24 سالہ عثمان قدیر اعوان کے نام سے ہوئی جبکہ کاسوکی کے رہائشی کی شناخت 25 سالہ بدر منیر کے نام سے ہوئی۔ دانش کی 2 بہنیں تھیں جبکہ مقتول نے گزشتہ برس فوج میں بھی شمولیت اختیار کی تھی لیکن باہر جانے کے لیے فوج چھوڑ دی تھی۔ عثمان قدیر 5 بہنوں کا واحد بھائی تھا، قاسم اعوان کے 4 بھائی اور 2 بہنیں تھی جبکہ ثاقب کی ایک بہن اور 4 بھائی تھے۔ پانچوں دوستوں نے کوئٹہ بس اسٹیشن پہنچنے پر سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر سیلفی بھی اپ لوڈ کی تھی۔ خیال رہے کہ غیر قانونی طریقے سے یورپ میں داخل ہونے کے واقعات سے متعلق خبروں کے باوجود گجراب اور منڈی بہاؤ الدین کے اضلاع میں انسانی اسمگلنگ کی سرگرمیوں میں کوئی کمی واقع نہیں آئی

Write on پیر, 20 نومبر 2017

رجنٹائن کی فوجی آبدوز آبدوز ’’اے ار اے سان جوان‘‘ آبدوز میں عملے کے 44 افراد سوار ہیں۔ آبدوز سے آخری بار سگنل 2 روز قبل موصول ہوئے تھے تاہم اس وقت بھی رابطہ قائم نہیں ہوسکا تھا۔آبدوز جنوبی امریکہ میں معمول کے
مشن کے بعد بیونس آئرس کے جنوب میں واقع اپنے بحری اڈے واپس آرہی تھی کہ اس دوران لاپتہ ہوگئی۔ ارجنٹائن نیوی کے ترجمان کا کہنا ہے کہ معلوم کرنے کی کوشش کررہے ہیں کہ آبدوز کہاں ہے اور اس کا کنٹرول روم سے رابطہ کس وجہ سے منقطع ہوا،اگر رابطے میں کوئی تکنیکی خرابی ہوئی ہے تو وہ جلد سطح آب پر نمودار ہوجائے گی، آبدوز میں کئی دنوں کا غذائی سامان موجود ہے جس کے ذریعے عملہ ہم سے رابطہ کیے بغیر بھی اپنا سفر متعدد روز تک جاری رکھ سکتا ہے۔ترجمان کا مزید کہنا تھا کہ ممکن ہے کہ آبدوز میں بجلی کی فراہمی منقطع ہونے کی وجہ سے مواصلاتی رابطہ ٹوٹ گیا ہو، ایسی صورتحال میں اگر کسی آبدوز کا رابطہ منقطع ہو جائے تو اسے سطح پر آ جانا چاہیے۔ ‘ہمیں توقع ہے کہ وہ سطح پر ہے اور ہم اس کو جلد تلاش کرلیں گے۔

Write on پیر, 20 نومبر 2017

اسلام آباد :حکومت نے وفاقی وزیر قانون زاہد حامد اور وزیر مملکت برائے انفارمیشن ٹیکنالوجی انوشہ رحمن کی سیکورٹی میں اضافہ کر دیا ہے جبکہ سیکورٹی اداروں نے دونوں وزراء کو غیر ضروری طور پر اپنے حلقوں کے دورے کرنے سے بھی منع کر دیا ہے۔
ذرائع کے مطابق ملک کی مذہبی جماعتوں کی جانب سے کاغذات نامزدگی کے فارم سے حلف کو نکالے جانے کے معاملے پر ہونے والے احتجاج اوراس میں ملوث وزراء کو فارغ کرنے کے مطالبے کے بعد وفاقی حکومت اور سیکورٹی اداروںنے وفاقی وزیر زاہد حامد اور وزیر مملکت انوشہ رحمن کی سیکورٹی میں اضافہ کر دیا ہے۔ذرائع کے مطابق سیکورٹی اداروںنے دونوں وزراء کو غیر ضروری دوروں اور اپنے آبائی حلقوں میں بھی جانے سے گریز کرنے کا مشورہ دیا ہے۔ ذرائع کے مطابق انتخابی اصلاحات کے مسودے کی تیاری میں وفاقی وزیر زاہد حامد کے ساتھ وزیر مملکت انوشہ رحمن نے بھی بھرپور معاونت کی تھی جس کی وجہ سے دونوں وزراء مذہبی حلقوں کی جانب سے تنقید کے زد میں ہیں اور تحریک لبیک یا رسول اللہ کی جانب سے وفاقی وزیر قانون زاہد حامد کے استعفے کا مطالبہ بھی سامنے آیا ہے تاہم وفاقی وزیر قانون نے سینٹ اور قومی اسمبلی کے حالیہ اجلاسوں کے دوران اور اپنے ویڈیو پیغام میں یہ واضح کر دیا تھا کہ کاغذات نامزدگی کے فارم سے ختم نبوت کے حلف نامے کو نکالنے میں اس کا کوئی کردار نہیں ہے اور اس الزام کی وجہ سے وہ وفاقی وزیر کے عہدے سے مستعفی نہیں ہونگے

Write on پیر, 20 نومبر 2017

لاہور :پولیس چھاپے کے دوران پولیس اہلکاروں کی طرف سے خاتون پر تشدد اور وڈیو بنانے کا انکشاف سامنے آیا ہے۔لاہور میں پولیس چھاپے کے دوران پولیس اہلکاروں کی طرف سے خاتون کے کپڑے پھاڑ کر موبائل وڈیو بنانے اور بلیک میل کرنے کے لیے اس وڈیو کو سوشل میڈیا میں پھیلانے کا انکشاف سامنے آیا ہے۔ 

واقعے میں ملوث 2 تھانیداروں کو انکوئری میں قصور وار پائے جانے پر فوری طور پر ’’نوکری سے برخاست‘‘ کرنے کے احکاماجاری کردیے گئے ہیں جبکہ ناکے پر شہری سے رشوت لینے پر ایک پولیس کانسٹیبل کو بھی نوکری سے فارغ کردیاگیا۔معلوم ہوا ہے کہ پولیس چھاپے کے دوران پولیس کے 2 تھانیداروں انتظار اور نجم نے شہری عبدالغفار کی بیوی کے کپڑے پھاڑ کر وڈیو بنائی اور بلیک میل کرنے کے لیے اس وڈیو کو سوشل میڈیا پر پھیلا دی۔سی سی پی او لاہور کیپٹن(ر) محمد امین وینس نے واقعہ کا علم ہونے پر دونوں پولیس تھانیداروں پر لگنے والے الزام پر ایس پی عہدے کے افسر کو میرٹ پر انکوائری کرنے کے احکام جاری کیے ، دونوں تھانیداروں کو الزام پر شوکاز نوٹس دیا گیا اور انکوائری میں شامل کیا گیا۔واضح رہے کہ انکوائری رپورٹ میں دونوں تھانیدار انتظار اور نجم قصور پائے گئے جس پر ان کو فوری طور پر خاتون کی وڈیو بنانے اور اسے سوشل میڈیا پر پھیلانے کے الزام ثابت ہونے پر نوکری سے برخاست کردیا گیا۔

Write on پیر, 20 نومبر 2017

اسلام آباد : معروف صحافی ڈاکٹر شاہد مسعود نے کہا کہ وزیر اعظم کے پاس ایک رپورٹ گئی ہے جس میں کہا گیا ہے کہ دھرنا دینے والوں پر اگر تشدد کیا گیا تو یہ آگ پورے ملک میں پھیل سکتی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ زاہد حامد سے کہا جا رہا ہے کہ استعفیٰ دیں لیکن نواز شریف کہہ رہے ہیں کہ ان سے استعفیٰ نہیں لیا جائے گا۔ زاہد حامد کے مطابق اگر میں نے استعفیٰ دیا تو میں یہ کام کروانے والے کا نام بتا دوں گا۔ ان کا کہنا تھا کہ اب اجلاسوں میںزاہد حامد کا نام کھُل کر سامنے آنا شروع ہو گیا ہے۔شاہد خاقان عباسی کو جانے والی رپورٹس میں کہا گیا ہے کہ اگر یہاں پر تشدد ہوا تواس کے نتیجے میں آگ پورے پاکستان میں پھیل سکتی ہے۔ اسی پروگرام میں گولڑہ شریف سے پیر غلام نظام الدین جامی کا کہنا تھا کہ ہمارا یہ خیال ہے کہ اس کے پیچھے زاہد حامد نہیں بلکہ کوئی اور ہے اور ہم اس شخص کو سب کے سامنے لانا چاہتے ہیں

صفحہ نمبر 1 ٹوٹل صفحات 1284

تازہ ترین خبریں

کالم / بلاگ