ہیڈلائنز


بھارت میں ’عدم برداشت نہیں ایوارڈز واپسی مناسب نہیں:روی شنکر

Written by | روزنامہ بشارت

ممبئی:  بھارت میں ’عدم برداشت‘سے متعلق بات کرنے والوں کی فہرست میں ہندوﺅں کے مذہبی پیشوا سری سری روی شنکر نے انٹری دی ہے ۔انڈیا ٹو ڈے کو انٹرویو دیتے ہوئے سری سری روی شنکر نے کہا ہے کہ بھارت میں ’عدم برداشت نہیں‘ ایوارڈ واپسی مہم بھارت کے لئے بڑا بحران تھا ، اہم شخصیات کاایوارڈز واپس کر نا مناسب اقدام نہ تھا ۔ 
یاد رہے ہندوﺅں کے مذہبی پیشوا سری سری روی شنکر کو حال ہی میں مودی سرکار کی جانب سے پدما وبھوشن ایوارڈ سے نوازا گیا ہے ۔ انہوں نے انٹرویو کے دوران مزید کہا کہ ایوارڈز واپسی سے ملک کے امیج کو نقصان پہنچامیں بھارت میں عدم برداشت پر اتفاق نہیں کرتا۔ عامر خان اور شاہ رخ خان کے بھارت میں ’عدم برداشت‘کے بیان سے متعلق ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہاکہ دونوں ادکار بھی تسلیم کر چکے ہیں کہ بھارت میں عدم برداشت نہیں ہے ۔ انہوں نے اس موقع پر عجیب منطق بھی پیش کی کہ اگرچہ ملک میں انتہا پسندانہ واقعات ہو رہے ہیں لیکن اس کامطلب یہ نہیں کہ بھارت میں عدم برداشت ہے یہ تو طویل عرصہ سے ہو رہا ہے اصل میں مسئلہ لا اینڈ آرڈر کا ہے ۔
ہندوﺅں کے مذہبی پیشوا سری سری روی شنکر نے گوشت پر پابندی کےحوالےسےسوال کے جواب میں کہا کہ ایک گروہ گوشت کھاتا ہے اور ایک نہیں لہذا حکومت کو اس حوالے سےفیصلہ کرنا چاہیے۔

تازہ ترین خبریں

کالم / بلاگ