ہیڈلائنز


17سال سے ایشوریا کے ساتھ کام کی خواہش تھی اب پوری ہوئی

Written by | روزنامہ بشارت

بولی وڈ ہدایت کار کرن جوہر 17 سال سے اداکارہ ایشوریا رائے بچن کے ساتھ کام کرنے کے خواہش مند تھے جن کی یہ خواہش آخر کار گزشتہ سال ریلیز ہونے والی فلم ’اے دل ہے مشکل‘ کے ساتھ پوری ہوئی۔ کرن جوہر نے بگ ذی انٹرٹینمنٹ ایوارڈز 2017 کی میزبانی کے دوران شائقین کو بتایا کہ وہ ایشوریا رائے کے ساتھ 1997 سے کام کرنا

چاہتے تھے اور ایسا 2016 میں ریلیز ہوئی فلم ’اے دل ہے مشکل‘ کے ساتھ ممکن ہوپایا، تاہم اگر ایشوریا اس فلم میں کام کرنے سے انکار کرتی تو وہ اس پروجیکٹ پر کام ہی ختم کردیتے۔کرن جوہر کا کہنا تھا کہ ’میں 1997 سے ایشوریا رائے کے ساتھ کام کرنا چاہتا تھا، میں نے ایشوریا رائے کو اپنی فلم کچھ کچھ ہوتا ہے کہ کہانی سنائی تاہم کچھ وجوہات کے باعث وہ اس فلم میں کام نہ کرسکی‘۔اس دوران ایشوریا رائے بچن بھی اسٹیج پر موجود تھیں، جنہیں ان کی فلم ’سربجیت‘ کے لیے موسٹ انٹرٹیننگ ایکٹر ان ڈرامہ کا ایوارڈ دیا گیا۔ہدایت کار نے مزید کہا کہ ’سالوں بعد جب اے دل ہے مشکل کا پلان بنایا تو مجھے امید تھی کہ ایشوریا اس کردار کے لیے بہترین ہیں، اور اگر وہ انکار کرتی تو میں اس پروجیکٹ کو ہی ختم کردیتا‘۔خیال رہے کہ ایشوریا رائے نے فلم ’اے دل ہے مشکل‘ میں صبا نامی شاعرہ کا کردار ادا کیا تھا، جنہیں ان کی اداکاری کے ساتھ ساتھ خوبصورت انداز کے لیے بھی بہت سراہا گیا۔اس حوالے سے ایشوریا رائے نے کرن جوہر کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ ’کرن آپ کا بیحد شکریہ جو آپ نے مجھے صبا کا کردار دیا، مجھے اتنی بہترین ٹیم کے ساتھ کام کرکے بیحد خوشی ہوئی، مجھے اتنا سپورٹ دینے کے لیے پوری کاسٹ کا بھی بیحد شکریہ‘۔واضح رہے کہ کرن جوہر اپنی ہدایات میں بننے والی پہلی فلم ’کچھ کچھ ہوتا ہے میں ’ٹینا‘ کے کردار کے لیے ایشوریا رائے بچن کو کاسٹ کرنا چاہتے تھے، تاہم رپورٹس کے مطابق ایشوریا رائے بچن نے فلم میں شاہ رخ خان اور کاجول کے مرکزی کرداروں کو دیکھتے ہوئے معاون کردار ادا کرنے سے انکار کردیا

تازہ ترین خبریں

کالم / بلاگ