ہیڈلائنز


جہالت ہمارے ملک کو تباہ کر رہی ہے

Written by | روزنامہ بشارت

 

نئی دہلی : سونم کپور کا کہنا ہے کہ میرے والد انیل کپور حقوق نسواں کے کٹر حامی ہیں اور اسی بنیاد پرہماری تربیت کی گئی ہے۔

سونم کپور نے کہا کہ میرے والد نے اپنی دو بیٹیوں اور ایک بیٹے کی پرورش بغیر کسی تفریق کی ہے،انہوں نے اپنی بیٹیوں کو بھی اتنے حقوق اوراختیارات دیے جتنے کہ اپنے بیٹے کو دیے۔

یہ بات انہوں نے ایک بھارتی نجی ٹیلی ویژن کے پروگرام کے مباحثے میں شرکت کے دوران کہی،ٹاک شو کا موضوع تھا ’خواتین حقیقی طور کس طرح قابل تقلید بن سکتی ہیں؟

سونم کپور نے پروگرام کے شرکاء سے گفتگو کے دوران مزید کہا کہ سینیما لوگوں کے ذہنوں کو تبدیل کرنے اورمثبت خیالات کی ترویج اورتعلیم کا بہترین ذریعہ ہے جس کی ہمارے ملک کو اشد ضرورت ہے کیوں کہ جہالت ہمارے ملک کی اقدارکو کھوکھلا کرتی جا رہی ہے۔

واضح رہے سونم کپور نے حال ہی میں ایک فلم میں حقیقی زندگی کے ایک کردار ’’نیرجا بھانوٹ‘‘ کو بہ خوبی نبھایا ہے جو کہ ایک ایئر ہوسٹس ہوتی ہے اور طیارے کی ہائی جیکنگ کے دوران اپنی جان پر کھیل کر مسافروں کی جان بچاتی ہے،سونم کپورنے اس کردارکوپُرکشش اورمتاثرکن قراردیا۔

اس پروگرام کے شرکاء میں فنون لطیفہ سے تعلق رکھنے والی معروف شخصیات کے علاوہ ماؤنٹ ایورسٹ کی چوٹی سر کرنے والی پہلی خاتون ارونیما سنہا اور اشتہارات کی دنیا کے گرو پراسون جوشی شامل تھے۔

جوشی نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ خواتین کے حقوق اور معاشرے میں اُن کے مرتبے کے حوالے سے گفتگو بھی ملکی سطح پر کھلم کھلا کرنے کے بجائے ہم ایک نجی محفل میں کر پارہے ہیں اس کا مطلب ہے کہ ہمارے ملک سب کچھ اچھا نہیں ہورہا ہے کچھ چیزیں ہیں جنہیں زیر بحث بھی لانا ہے اوراس امتیازات کو ختم بھی کرنا ہے۔

تازہ ترین خبریں

کالم / بلاگ