ہیڈلائنز


اداکارہ نرگس کی خود کشی کی کو شش

Written by | روزنامہ بشارت

 نرگس کا شمار بھارتی فلم انڈسٹری کی عظیم اداکاراؤں میں ہوتا ہے، جس نے اپنی دلفریب اداکاری سے فلم بینوں کے دلوں میں اپنی چھاپ چھوڑی۔ نرگس نے سالوں تک بالی ووڈ فلموں پر راج کیا۔ نرگس نے 1 جون 1929ء کو اس دنیا میں آنکھ کھولی تو ان کے والدین نے اپنی بیٹی کا نام فاطمہ راشد رکھا۔ 1935ء میں فاطمہ نامی اس لڑکی نے فلم تلاش حق میں چائلڈ ایکٹریس کے طور پر اداکاری کی۔ تاہم 1942ء میں ہی انہوں نے فلم تمناء سے فلم انڈسٹری میں ہیروئن کی حیثیت سے قدم رکھ دیا تھا۔ 1949ء میں ہدایتکار محبوب خان کی فلم انداز کی کامیابی نرگس، راج کپور اور دلیپ کمار تینوں کے لئے کافی اہم ثابت ہوئی۔ انداز کے بعد راج کپور اور نرگس کی فلم برسات بھی ریلیز ہوئی۔ دونوں فلموں کی کامیابی سے راج کپور اور نرگس کی قسمت چمک گئی۔ دونوں نے ایک ساتھ تقریبا 16 فلمیں کیں۔ دونوں کی جوڑی کو فلموں میں بے حد پسند کیا جاتا تھا۔

اداکارہ نرگس پردے پر جتنی الگ نظر آتی تھیں، حقیقی زندگی میں اتنے ہی درد کا انہیں سامنا پڑا۔ نرگس اور راج کپور کے معاشقہ کی خبر اس دور میں سب کی زبان پر تھی۔ دونوں ایک دوسرے سے محبت بھی کرنے لگے تھے، لیکن راج کپور پہلے سے شادی شدہ تھے۔ ان کی حقیقی زندگی عوام میں بحث کا موضوع بننے لگی۔ راج کپور کے خاندان کو جب اس بات کی خبر ملی، تو کافی ہنگامہ ہوا۔ اپنے خاندان کو بکھرتا دیکھ کر راج کپور نے آہستہ آہستہ نرگس سے دوری بنانی شروع کر دی۔ راج کپور کی اس بے رخی سے نرگس کافی پریشان رہنے لگیں۔ كشور ڈیسائی کی کتاب کے مطابق اس کے بعد نرگس نے کئی مرتبہ خود کشی کرنے کے بارے میں بھی سوچا تھا۔ تاہم برے دور میں نرگس کی زندگی میں سنیل دت آ گئے۔ دونوں نے مدر انڈیا فلم میں ایک ساتھ کام کیا، جس کے بعد دونوں نے شادی کا فیصلہ کر لیا

تازہ ترین خبریں

کالم / بلاگ