ہیڈلائنز


بھارت میں ساڑھیوں کی تشہیر کیلئے خواجہ سرا ماڈلز

Written by | روزنامہ بشارت

نیو دہلی: بھارت کی جنوبی ریاست کیرالہ میں ایک ڈیزائنر نے اپنی ساڑھیوں کی تشہیر کیلئے انوکھا قدم اٹھاتے ہوئے دو خواجہ سرا ماڈلز کا سہارا لیا ہے۔ غیر ملکی میڈیا کی ایک رپورٹ کے مطابق سماج میں خواجہ سراں کو تیسری صنف کے طور پر حقارت سے دیکھا جاتا ہے اور انھیں مذاق کا نشانہ بنایا جاتا ہے۔ ایسے میں شرمیلا نائر کا انھیں ماڈل کے طور پر منتخب کرنا توجہ کا باعث ہے۔ شرمیلا نائر بتاتی ہیں کہ مایا مینن اور گوری ساوتری کو پہلے سے ماڈلنگ کا کوئی تجربہ نہیں ہے۔ ڈیزائنر نے بتایا کہ انھیں ان دونوں کی ساڑھی میں تصاویر بھیجی گئیں لیکن جب وہ ان سے ملیں تو وہ مردوں کی طرح پینٹ اور شرٹ میں تھے۔ انھوں نے بتایا جب ہم نے اپنی مہم کے لیے انھیں ساڑھی میں تیار کیا تو وہ بالکل بدل چکے ۔ رپورٹ کے مطابق شرمیلا نائر کی ساڑھیاں کرناٹک کے ہبلی کے ایک چھوٹے سے گاؤں میں تیار ہوتی ہیں اور ان کی قیمت ڈیڑھ ہزار سے ڈھائی ہزار بھارتی روپے کے درمیان ہے

تازہ ترین خبریں

کالم / بلاگ