ہیڈلائنز


کینیڈا میں دیوقامت برفانی تودہ سیاحوں کی توجہ کا مرکز بن گیا

Written by | روزنامہ بشارت

کینیڈا کا ایک چھوٹا قصبہ اچانک ایک دیوقامت برفانی تودہ نمودار ہوا اور سیاحوں کی توجہ کا مرکز بن گیا ہے، یہ اس سیزن میں گلیشیئر سے ٹوٹ کر الگ ہونے والا برف کا پہلا بڑا ٹکڑا یا برفانی تودہ ہے۔

یہ تودہ فیری لینڈ قصبے کے قریب جنوبی ساحلی پٹی پر پہنچا، برف کے اس بڑے پہاڑ کو دیکھنے کے لیے بڑی تعداد میں فوٹو گرافر اور سیاحوں اس خوبصورت نظارے کو دیکھنے کے لئے امڈ آئے ہیں۔

مقامی میئر ایڈرین کیونگا نے بتایا کہ برفانی تودے موسم بہار کے اختتام یا موسم گرما کے شروع تک رہنے کے بعد ختم ہو جاتے ہیں لیکن اس تودے کے بارے میں لگتا ہے کہ یہ یہاں موجود رہے گا۔

یو فاؤنڈ لینڈ اور لیبراڈر کے ساحلی علاقے کو مقامی طور پر برفانی تودوں کی گزرگاہ کہا جاتا ہے اور اس کی وجہ قطب شمالی سے موسم بہار میں برف کے بڑے بڑے ٹکڑوں کا ٹوٹ کا آنا ہے۔

مقامی میئر ایڈرین کیونگا نے کینڈین پریس کو بتایا کہ برفانی تودے موسم بہار کے اختتام یا موسم گرما کے شروع تک رہنے کے بعد ختم ہو جاتے ہیں لیکن یہ تودہ بہت ہی بڑا ہے اس  کو دیکھ کر لگتا ہے کہ یہ یہاں موجود رہے گا جبکہ یہ فوٹوگرافی کا ایک اچھا موقع فراہم کر رہا ہے۔

خیال رہے کہ اس سال قطب شمالی سے سینکڑوں کی تعداد میں برف کے ٹکڑے اس جگہ سے گزریں گے،یہی وجہ ہے کہ سیاحوں کے حوالے سے  یہ ایک مصروف سیزن ہو۔


Read Basharat Online

 

 

PentaBuilders

روزنامہ بشارت ٹویٹر


Follow Daily_Basharat on Twitter

تازہ ترین خبریں

کالم / بلاگ