کراچی کے طالب علموں کو ملک کے دیگر طلبہ کے مقابلے میں کم مواقع میسر ہیں۔ارشد وہرا

Written by | روزنامہ بشارت

ڈپٹی میئر کراچی ڈاکٹر ارشد وہرا نے کہا کہ دائود انجینئرنگ یونیورسٹی کراچی میں ہونے کے باوجود اس پر وفاق کی پالیسی کا اطلاق ہوتاہے جس کی وجہ سے کراچی کے طلبہ کو 70 فیصد یا اس سے زائد پرسنٹیج حاصل کرنے کے باوجود بھی داخلہ نہیں ملتا ،جبکہ دیگر شہروں کے طلبہ کو انتہائی نمبروں کے باوجود کوٹہ سسٹم کے تحت داخلہ مل جاتاہے جو لمحہ فکریہ ہے،یہ تفریق نئی نہیں بلکہ اس وقت سے جب میں خود طالب علم تھا ۔کراچی کے طالب علموں کو ملک کے دیگر طلبہ کے مقابلے میں کم مواقع میسر ہیں جس پر ہمیں سوچنے کی ضرورت ہے۔آنے والے وقت میں پاکستان کو دیگر ممالک کی طرح موسمیاتی تبدیلی کا اہم مسئلہ درپیش ہے جس سے نمٹنے کے لئے ہمیں اپنے شہر کراچی میں بڑی تعداد میں شجر کاری کرنا ہوگی تاکہ ہمارا شہر اس مسئلے سے متاثر نہ ہوسکے ،اس ضمن میں شہری حکومت کو ہر شہری کاانفرادی تعاون درکار ہے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے جامعہ کراچی کے شعبہ کمپیوٹر سائنس اور آئی ٹرپل ای کمپیوٹر سوسائٹی کے اشتراک سے منعقدہ دوروزہ بین الاقوامی کانفرنس بعنوان: ’’پاکستان کمپیوٹر سوسائٹی کانگریس2017 ئ‘‘ کی اختتامی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے مزید کہا کہ سی پیک کے فعال ہونے سے ملک میں معاشی انقلاب برپا ہوجائے گااور بیروزگاری پر قابوپانے میں مدد ملے گی۔یہ منصوبہ پاکستان کی معاشی تاریخ میں تاریخی سنگ میل ثابت ہوگا،حکومت کو چاہیئے کہ صنعتی اداروں اور انڈسٹریز کو پابند کرے کہ وہ ہرسال نوجوان طلبہ کو تربیت فراہم کرنے کے لئے سمر پروگرامز منعقد کرائیں۔انہوں نے بین الاقوامی کانفرنس کے انعقاد پر شعبہ کمپیوٹر سائنس اورچیئر مین شعبہ کمپیوٹر سائنس ڈاکٹر صادق علی خان کو مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ اس طرح کی کانفرنسز کا انعقاد وقت کی اہم ضرورت ہے۔اس موقع پر دادابھائی یونیورسٹی کی وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر شاہانہ عروج کاظمی اور ایڈیشنل آئی جی سندھ خادم حسین بھٹی،پروفیسر ڈاکٹربھوانی شنکر چوہدری ،ڈاکٹر صادق علی اور دیگر بھی موجود تھے۔ڈاکٹر شاہانہ عروج کاظمی نے کہا کہ عصر حاضر مقابلے کا دورہے ہمارے طلبہ کو چاہیئے کہ وہ جدید ٹیکنالوجی پر عبور حاصل کرکے ملک وقوم کی خدت کو اپنا شعار بنائیں۔خادم حسین بھٹی نے کہا کہ محنت کے بغیر کوئی قوم ترقی نہیں کرسکتی ہے جن اقوام نے محنت کو اپنا یا آج وہ دوسرے ممالک کے لئے رول ماڈل کا درجہ رکھتی ہیں اور جن اقوام اس کو چھوڑدیا وہ پستی کا شکارہیں۔ڈاکٹر صادق علی خان نے کہا کہ مذکورہ کانفرنس کا انعقاد ٹیکنالوجی کے شعبہ میں ہونے والی نت نئی تبدیلیوں کے پیش نظر کیا گیا ہے اور یہ کانفرنس ملک کے کمپیوٹر سائنس اور آئی ٹی سیکٹر میں ایک اہم پیش رفت ہے جو جاری رہے گی۔


Read Basharat Online

تازہ ترین خبریں

روزنامہ بشارت ٹویٹر


Follow Daily_Basharat on Twitter
Showers

26°C

اسلام آباد

Showers
Humidity: 31%
Wind: W at 17.70 km/h
Mostly cloudy

36°C

لاہور

Mostly cloudy
Humidity: 15%
Wind: WNW at 11.27 km/h
SP_WEATHER_BREEZY

31°C

کراچی

SP_WEATHER_BREEZY
Humidity: 59%
Wind: WSW at 51.50 km/h
Sunny

26°C

کوئٹہ

Sunny
Humidity: 5%
Wind: WNW at 22.53 km/h
Partly cloudy

32°C

پشاور

Partly cloudy
Humidity: 20%
Wind: ESE at 22.53 km/h