ہیڈلائنز

Reporter HH

Write on جمعرات, 18 مئی 2017

کراچی (میڈیا ریلیشن آفیسر) ۔ این ای ڈی یونی ورسٹی آف انجیئنرنگ اینڈ ٹیکنالوجی کے ارتھ کوئیک انجینئرنگ ڈیپارٹمنٹ کی لیب میں اسٹیل کینیڈا کے تعاون سے زلزلہ پروف عمارتوں کی تعمیراورموجودہ عمارتوں کے لیے اسٹیل سے بنے بکلنگگ ری اسٹرین فریم کا کامیاب تجربہ کیا گیا۔

بکلنگ ری اسٹرین بریسنگ(بی آر بی) سے پہلے کے مقابلے زیادہ لچکدار اور مضبوط ڈھانچے کی تعمیرممکن ہے جس کے ذریعے عمارت زلزلے کے شدید جھٹکوں کو برداشت کرسکتی ہے۔این ای ڈی یونی ورسٹی کے وائس چانسلرپروفیسر ڈاکٹر سروش حشمت لودھی نے زلزلہ پروف ڈھانچے کو وقت کی اہم ضرورت قرار دیتے ہوئے کہا کہ اس فریم کو لگوانے سے عمارت انتہائی محفوظ ہوجاتی ہے اور خرچ بھی زیادہ نہیں آتا ہے۔

thumbnail VC with guests

وائس چانسلر نے چیئرمین شعبہ ارتھ کوئیک کے چیئرمین اور ٹیم کو سراہتے ہوئے کامیاب تجربے پر مبارک باد پیش کی۔ ارتھ کوئیک انجینئرنگ ڈیپارٹمنٹ کے چیئرمین ڈاکٹر محمد مسعود رفیع کا کہناتھا کہ نئی تعمیر ہونے والی عمارتوں کو زلزلہ پروف بنانے کے لیے مختلف طریقے آزمائے جاتے ہیں لیکن پُرانی تعمیر شدہ عمارت کے لیے بی آر بی بہترین طریقہ ہے جس کے ذریعے کسی بڑی توڑ پھوڑ کے بغیر عمارت کو محفوظ بنایا جاسکتا ہے۔اسٹیل کینیڈا لمیٹڈ کے ریجنل ایکسپورٹ مینجر عبدالمالک کا کہنا تھا کہ بنگلہ دیش میں اس کا تجربہ کامیاب رہا جب کہ پاکستان کے زلزلے کی بیلٹ پر واقع ہونے کی وجہ سے یہاں کی تعمیراتی صنعت کو بی آر بی کی ضرورت ہے۔

thumbnail dr masood rafi with team

یاد رہے کہ اگر زلزلوں کی سر زمین جاپان کا کشمیر اور اس سے ملحقہ علاقوں میں رونما ہونے والے آٹھ اکتوبر کے زلزلے سے موازنہ کیا جائے تو پتا چلتا ہے کہ ریکٹر اسکیل پر پاکستان میں آئے زلزلے کی شدّت نسبتاً کم تھی، اس کے باوجود جاپان کی نسبت پاکستان میںتباہی پانچ گنا زیادہ ہوئی تھی۔ پاکستان میں ہزاروں افراد لقمہ اجل بنے، لاکھوں گھر تباہ، متعدد شہر ملیا میٹ ہوئے جب کہ انفرااسٹرکچر کو شدید ترین نقصان پہنچا تھا۔ ماہرین کے مطابق پاکستان میں زیادہ تباہی کی وجہ ناقص حکمتِ عملی، غیر معیاری طرزِ تعمیر اور بچاؤکے حوالے سے آگہی کا فقدان تھا لیکن محقیقین کا یہ بھی کہنا ہے کہ زیادہ تر اموات عمارتیں گرنے کے سبب رونما ہوئیں۔

thumbnail frame

Write on پیر, 15 مئی 2017

جامعہ کراچی کے بورڈ برائے اعلیٰ تعلیم وتحقیق کے کنوینرایڈمیشنزپروفیسرڈاکٹر محمد احمد قادری کے اعلامیہ کے مطابق ایم فل،پی ایچ ڈی ،ایم ایس اور ایم ڈی کے داخلہ ٹیسٹ کے نتائج کا اعلان کردیاگیاہے۔داخلہ ٹیسٹ کے نتائج آج بروز منگل 16 مئی 2017 ء کو جامعہ کراچی کی ویب سائٹ پر جاری کردیئے جائیں گے۔داخلہ ٹیسٹ میں 2941 طلبہ نے شرکت کی جن میں سے 1375 طلباوطالبات کو کامیاب قراردیاگیا ۔کامیابی کا تناسب46.02 فیصدرہا۔ ایم فل کے ٹیسٹ میں2527طلبہ شریک ہوئے جبکہ 1133 طلبہ کو کامیاب قراردیاگیا۔پی ایچ ڈی کے ٹیسٹ میں 336 طلبہ شریک ہوئے ،175 کو کامیاب قراردیاگیا۔اسی طرح ایم ایس کے ٹیسٹ میں 63 طلبہ شریک ہوئے،44کو کامیاب قراردیاگیاجبکہ ایم ڈی کے داخلہ ٹیسٹ میں 44 طلبہ شریک ہوئے جس میں سے 23 طلبہ کو کامیاب قراردیاگیا۔تفصیلات کے مطابق کلیہ سماجی علوم کے داخلہ ٹیسٹ میں 736 طلبہ شریک ہوئے جبکہ 376 طلبہ کو کامیاب قراردیاگیا ۔کامیاب طلبہ کا تناسب 51 فیصد رہا۔کلیہ علوم میں 1171 طلبہ شریک ہوئے،487 طلبہ کو کامیاب قراردیاگیا ۔کامیاب طلبہ کا تناسب 41 فیصد رہا۔کلیہ معارف اسلامیہ میں 312 طلبہ شریک ہوئے،187 طلبہ کو کامیاب قراردیاگیا۔کامیاب طلبہ کا تناسب 60 فیصدرہا۔کلیہ نظمیات وانصرام میں 273 طلبہ شریک ہوئے،97 طلبہ کو کامیاب قراردیاگیا۔کامیاب طلبہ کا تناسب 35.05 فیصدرہا۔کلیہ علم الادویہ میں 212 طلبہ شریک ہوئے ،96 طلبہ کو کامیاب قراردیاگیا۔کامیاب طلبہ کا تناسب 45 فیصدرہا۔کلیہ تعلیم میں 106 طلبہ شریک ہوئے،53 طلبہ کو کامیاب قراردیاگیا۔کامیاب طلبہ کا تناسب 50 فیصدرہا۔اسی طرح کلیہ قانون کے داخلہ ٹیسٹ میں 52 طلبہ شریک ہوئے جبکہ 12 طلبہ کو کامیاب قراردیاگیا۔کامیاب طلبہ کا تناسب 23 فیصدرہا۔

Write on ھفتہ, 13 مئی 2017

نئی دلی: بھارت نے آئی سی سی چیمپئنز ٹرافی کے لئے ٹیم کا اعلان کر دیا ہے جس میں ویرات کوہلی کو ٹیم کا کپتان برقرار رکھا گیا ہے۔بھارتی میڈیا کے مطابق بی سی سی آئی نے آئی سی سی چیمپئنز ٹرافی کے لئے اپنی ٹیم کا اعلان کر دیا ہے جس کے لئے ویرات کوہلی کو ٹیم کا کپتان برقرار رکھا گیا ہے۔ دیگر کھلاڑیوں میں مہندرا سنگھ دھونی، یووراج سنگھ، شیکر دھون، روہت شرما، اجنکیا رہانے، امیش یادیو، رویندرا جڈیجا، روی چندرن ایشون، محمد شامی، بھونیشور کمار، ہردیک پانڈے اور جسپریت بمراہ شامل ہیں

۔واضح رہے کہ گزشتہ روز بی سی سی آئی نے آئی سی سی اور بھارتی سپریم کورٹ کے دبا میں آ کر چیمپئنز ٹرافی میں شرکت کا فیصلہ کیا تھا۔ آئی سی سی چیمپئنز ٹرافی یکم جون سے 18 جون تک انگلینڈ کے 3 شہروں میں کھیلی جائے گی جس میں پاک بھارت ٹاکرا 4 جون کو شیڈول ہے۔

Write on جمعرات, 11 مئی 2017

کراچی (اسٹاف رپورٹر)بینظیر بھٹو شہید یونیورسٹی لیاری میں ہیٹ اسٹروک سے آگاہی پر سیمینار کا انعقاد کیا گیا۔ سیمینار کاا نعقاد گورنر ہائوس اور علاج ٹرسٹ کے زیراہتمام منعقد کیا گیا جس کامقصد اساتذہ اور طلباء میں ہیٹ اسٹروک سے بچائو کی معلومات اور متاثرہ شخص کو فوری طبی امداد سے آگاہی فراہم کرنا تھا۔سیمینار میں علاج ٹرسٹ کے سی ای اوڈاکٹر طلحہٰ رحمان اور ڈاکٹر نور بیگ کنسلٹنٹ ایمر جنسی آغا خان اسپتال نے شرکاء کو ہیٹ اسٹروک سے بچائو اور متاثر ہونے کی صورت میں فوری طبی امداد کے طریقوں سے آگاہ کیا۔ سیمینار کے آخر میں وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر اختر بلوچ نے سیمینار کے انعقاد پر علاج ٹرسٹ کی انتظامیہ کا شکریہ ادا کیا اس موقع پر انھوں نے کہا کہ گرمیوں کے موسم میں ہیٹ اسٹروک انتہائی خطرناک ثابت ہو سکتا ہے اور اس اہم موضوع پر آج کایہ سیمینار موضوع کے حولاے سے نہیایت اہمیت کا حامل ہے ۔طلباء اور اساتذہ اس اہم موضوع پر مکمل آگاہی حاصل کر کے ان معلومات کو دوسروں تک پہنچائیں تاکہ لوگوں کو ہیٹ اسٹروک سے بچایا جاسکے۔

Write on پیر, 08 مئی 2017

وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف نے رشوت کی پیشکش کے الزام پر چیرمین تحریک انصاف عمران خان کو 10 ارب روپے ہرجانے کا نوٹس بھجوادیا ہے۔

  وزیراعلیٰ پنجاب شہبازشریف کے وکیل خواجہ حارث کی جانب سے چیرمین تحریک انصاف عمران خان کو نوٹس بھجوایا گیا جس میں کہا گیا ہے کہ عمران خان کی جانب سے 10 ارب روپے کی پیشکش کا الزام بے بنیاد ہے، عمران خان نے لگائے گئے الزامات میں ایک دوست کا بھی ذکر کیا، ان کا مؤکل ایک صوبے کا سربراہ اور سیاست میں انتہائی اہم کردار کا حامل ہے، عمران خان نے الزام لگا کر ان کی ساکھ کو مجروح کیا ہے جس پر وہ شہباز شریف سے معافی مانگیں، عمران خان اگر وزیراعلی پنجاب سے معافی نہیں مانگتے تو 10 ارب روپے ہرجانہ دیں۔

واضح رہے کہ عمران خان نے الزام لگایا تھا کہ پاناما لیکس پر زبان بند رکھنے کے لیے شہباز شریف نے اپنے ایک دوست کے ذریعے انہیں 10 ارب روپے رشوت کی پیشکش کی تھی۔

Write on پیر, 08 مئی 2017

اسلام آباد: بھارتی شہری ڈاکٹرعظمیٰ نے دعویٰ کیا ہے کہ مجھے ہراساں کیا گیا اور زیادتی کا نشانہ بنایا گیا جب کہ مجھ سے سفری دستاویزات بھی چھین لی گئیں۔

بھارتی شہری ڈاکٹرعظمیٰ نے اسلام آباد کی مجسٹریٹ عدالت میں 506 ضابطہ فوجداری کی  درخواست دائر کردی ہے جس میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ مجھے ہراساں کیا گیا اور زیادتی کا نشانہ بنایا گیا جب کہ مجھ سے سفری دستاویزات بھی چھین لی گئیں۔

ڈاکٹر عظمیٰ نے اپنے بیان میں مزید کہا کہ میں پاکستان شادی کرنے نہیں آئی تھی، گن پوائنٹ پر میری شادی کرائی گئی جب کہ مجھ سے تمام چیزیں بھی چھین لی گئیں۔ بھارتی شہری کا بیان میں کہنا تھا کہ مجھے صبح و شام زیادتی کا نشانہ بنایا گیا، ان لوگوں کی زبان بھی مختلف تھی جب کہ وہاں موجود بچے طاہر کو ابو کہہ کر پکار رہے تھے۔

ڈاکٹر عظمیٰ نے عدالت سے سیکیورٹی فراہم کرنے کی درخواست بھی کی جس پر عدالت نے نکاح خواں اور دیگر فریقین کو نوٹسز جاری کرتے ہوئے 11 جولائی کو طلب کر لیا۔

 گزشتہ روز ترجمان دفترخارجہ نفیس ذکریا کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا تھا کہ بھارتی ہائی کمیشن نے ڈاکٹرعظمیٰ کے معاملے پر رابطہ کیا اور بتایا ہے کہ طاہرعلی پہلے سے شادی شدہ ہے جس کی وجہ سے عظمیٰ نے ہائی کمیشن میں پناہ لی اور وہ اب واپس بھارت جانے کی خواہشمند ہے۔

واضح رہے کہ نئی دہلی سے تعلق رکھنے والی بھارتی خاتون ڈاکٹرعظمیٰ اور بونیر سے تعلق رکھنے والے پاکستانی شہری طاہرعلی ملائیشیا میں ایک دوسرے کی محبت میں گرفتار ہوگئے تھے

Write on پیر, 08 مئی 2017

اسلام آباد: پاکستان الیکٹرانک میڈیا ریگولیٹری اتھارٹی کے چیرمین ابصار عالم نے کہا ہے کہ انہیں اور پیمرا ملازمین کو جان کی دھمکیاں مل رہی ہیں اور اگر ہمیں اسی طرح دھمکیاں ملتی رہیں تو  ہمارے لیے کام کرنا مشکل ہوجائے گا۔

اسلام آباد میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے ابصار عالم نے کہا کہ پیمرا ایک ریاستی ادارہ ہے، جس کی کچھ ذمہ داریاں ہیں جن کو نبھانے کی کوشش کر رہے ہیں، تمام ادارے آئین کے مطابق پیمرا کی مدد کرنے کے پابند ہیں لیکن ہمارے لیے کام کرنا ناممکن ہوچکا ہے۔ ہمارے اختیارات کو محدود کردیا گیا ہے، اداارے کا عملی طور پر اختیار ہائی کورٹس کے پاس چلا گیا ہے۔ آپریشن رد الفساد کے تحت پیمرا کی کچھ ذمہ داریاں ہیں، ہم نے شرانگیزی کے خلاف کارروائی کی لیکن عدالتوں کے سامنے جھوٹ بول کر حکم امتناعی کے پیچھے چھپا جا رہا ہے۔ فحاشی کے خلاف کارروائی کرتے ہیں تو عدالتیں حکم امتناعی دے دیتی ہیں، پیمرا نے 357 ایکشن لیے تو 337 عدالت میں چیلنج ہوئے، نیشنل ایکشن پلان شو کاز نوٹسز پر بھی اسٹے آرڈر لے لیا جاتا ہے۔ چیف جسٹس سے درخواست کی ہے کہ کیسز کے فیصلے جلد کیے جائیں۔ اگر پیمرا کا اختیار سب کو اپنے پاس رکھنا ہے تو پیمرا کو بند کردیں۔

ابصار عالم نے کہا کہ کچھ لوگ ملک میں انتشار پھیلا رہے ہیں، بعض ٹی وی اورنیوز اینکرز معاشرے میں زہر گھول رہے ہیں، ایک سال 5 ماہ سے میری ذات پر حملے ہو رہے ہیں، مجھے بتایا جاتا ہے کہ اسلام اور ناموس رسالت کیا ہے حالانکہ تحریک نظام مصطفیٰ کے لیے میرے دو بھائی شہادت پاچکے ہیں، جو میرے حوالے سے بات کرتے ہیں ان سب کو جانتا ہوں۔

 چیرمین پیمرا نے کہا کہ پیمرا کے لیے کام کرنا مشکل ہوگیا ہے، ہمیں کونے سے لگا دیا ہے۔ پیمرا کے ملازمین کو دھمکیاں دی جارہی ہیں، میڈیا پاکستان کا چوتھا ستون ہے، پاکستان کے آئین کے تحت کام کرنے والے ادارے کے ملازمین کو جان کی دھمکیاں ملتی رہیں تو ہمارے لیے کام کرنا مشکل ہوجائے گا۔ وزیراعظم سے ملاقات کے لئے وقت مانگا جو نہیں ملا اس لئے پریس کانفرنس کرنا پڑی، ہم نے وفاقی حکومت سے مدد مانگی ہے، ہمیں تحفظ فراہم کیا جائے۔ اگرایسے افراد کو کٹہرے میں نہیں لایا گیا توکام کرنا مشکل ہوجائے گا، اگر ہمیں تحفظ فراہم نہ کیا گیا تو ہمارے لیے کام کرنا مشکل ہوجائے گا۔ مجھے اپنی جان کا خوف نہیں مگر ملازمین کی جانیں خطرے میں نہیں ڈال سکتا۔ 
Write on ھفتہ, 06 مئی 2017

اسلام آباد:بھارت انسانیت بھی بھول گیا،علاج کی غرض سے بھارت جانے کے منتظر پاکستان مریضوں کو بھی ویزے جاری نہیں کیے جا رہے،ہزاروں مریض ہر لمحہ موت کی جانب بڑھنے لگے۔
تفصیلات کے مطابق بھارت نے پاکستانی مریضوں کو ویزہ دینے پر غیر اعلانیہ پابندی عائد کر دی،مودی سرکار کے فیصلے سے ہزاروں پاکستانی مریض متاثر ہونے لگے،پاکستان نے بھارتی سفارتکار کو دفترخارجہ بلا کر تشویش کا اظہار کیا۔
ذرائع کے مطابق گزشتہ دو ماہ سے پاکستانی مریضوں کو علاج کیلئے بھارتی ویزہ جاری نہیں کیے جا رہے،پاکستان سے ہر سال دل،جگر اور گردے کے ہزاروں مریض علاج کی غرض سے بھارت جاتے ہیں،روراں ہفتے ہی بھارت مطالعاتی دورے پر جانے والے پاکستانی طلباء کو بھی زبردستی واپس بھیج دیا گیا تھا۔

صفحہ نمبر 1 ٹوٹل صفحات 161


Read Basharat Online

 

 

PentaBuilders

روزنامہ بشارت ٹویٹر


Follow Daily_Basharat on Twitter

تازہ ترین خبریں

کالم / بلاگ