پاکستان

لاہور:  ہائی کورٹ نے  وزیراعظم کے مشیروں کی تفصیلات طلب کرتے ہوئے وفاقی حکومت کو نوٹس جاری کردیا۔ تفصیلات کے مطابق لاہور ہائی کورٹ نے وزیراعظم کے مشیروں کو کام سے روکنے کے لئے حکم امتناع کی استدعا مسترد کردی۔ درخواست گزار کے وکیل نے مؤقف پیش کیا کہ وزیراعظم نوازشریف نے 5 سے زائد مشیر رکھے ہیں اور یہ عہدہ آئینی نہیں بلکہ سیاسی ہے، عدالت اضافی مشیروں کی تقرری کا نوٹی فکیشن کالعدم قرار دے۔ چیف جسٹس منصور علی شاہ کا کہنا تھا کہ کوئی بھی مشیر وزیر کے اختیارات استعمال نہیں کرسکتا تاہم پہلے عدالت وفاقی حکومت کا مؤقف سنے گی اور پھر فیصلہ کیا جائے گا۔ عدالت نے وزیراعظم کے مشیروں کی تفصیلات طلب کرتے ہوئے وفاقی حکومت کو نوٹس جاری کردیا اور کیس کی سماعت 27 فروری تک ملتوی کردی گئی۔ دوسری جانب لاہور ہائی کورٹ میں پنجاب میں گورنر راج لگانے کی درخواست پر سماعت ہوئی، درخواست گزار نے مؤقف اختیار کیا کہ پنجاب کی حکومت صوبے میں امن و امان کی صورتحال پر قابو پانے میں مکمل طور پر ناکام ہوچکی ہے لہذٰا صوبے بھر میں گورنرراج نافذ کیا جائے۔ چیف جسٹس منصورعلی شاہ ریمارکس دیئے کہ  پاکستان کے آئین میں گورنر راج لگانے کے لئے طریقہ کار موجود ہے، عدالت کے پاس یہ اختیار نہیں کہ وہ گورنر راج نافذ کردے درخواست گزار اسمبلیوں میں بیٹھے نمائندوں سے بات کریں۔عدالت نے صوبے میں گورنر راج لگانے کی درخواست مسترد کردی۔

لاہور: 

 

 ہائی کورٹ نے  وزیراعظم کے مشیروں کی تفصیلات طلب کرتے ہوئے وفاقی حکومت کو نوٹس جاری کردیا۔

ایکسپریس نیو زکے مطابق لاہور ہائی کورٹ نے وزیراعظم کے مشیروں کو کام سے روکنے کے لئے حکم امتناع کی استدعا مسترد کردی۔ درخواست گزار کے وکیل نے مؤقف پیش کیا کہ وزیراعظم نوازشریف نے 5 سے زائد مشیر رکھے ہیں اور یہ عہدہ آئینی نہیں بلکہ سیاسی ہے، عدالت اضافی مشیروں کی تقرری کا نوٹی فکیشن کالعدم قرار دے۔

چیف جسٹس منصور علی شاہ کا کہنا تھا کہ کوئی بھی مشیر وزیر کے اختیارات استعمال نہیں کرسکتا تاہم پہلے عدالت وفاقی حکومت کا مؤقف سنے گی اور پھر فیصلہ کیا جائے گا۔ عدالت نے وزیراعظم کے مشیروں کی تفصیلات طلب کرتے ہوئے وفاقی حکومت کو نوٹس جاری کردیا اور کیس کی سماعت 27 فروری تک ملتوی کردی گئی۔

دوسری جانب لاہور ہائی کورٹ میں پنجاب میں گورنر راج لگانے کی درخواست پر سماعت ہوئی، درخواست گزار نے مؤقف اختیار کیا کہ پنجاب کی حکومت صوبے میں امن و امان کی صورتحال پر قابو پانے میں مکمل طور پر ناکام ہوچکی ہے لہذٰا صوبے بھر میں گورنرراج نافذ کیا جائے۔ چیف جسٹس منصورعلی شاہ ریمارکس دیئے کہ  پاکستان کے آئین میں گورنر راج لگانے کے لئے طریقہ کار موجود ہے، عدالت کے پاس یہ اختیار نہیں کہ وہ گورنر راج نافذ کردے درخواست گزار اسمبلیوں میں بیٹھے نمائندوں سے بات کریں۔عدالت نے صوبے میں گورنر راج لگانے کی درخواست مسترد کردی۔

 محکمہ پنجاب فوڈ اتھارٹی نے مختلف شہروں میں کارروائیاں کرتے ہوئے مردہ مرغیوں کا گوشت اور نیم مردہ مرغیاں قبضے میں لے لیں، اہلکاروں نے فوری کارروائی کرتے ہوئے 2800 کلو سے زائد حرام گوشت تلف کردیا۔

تفصیلات کے مطابق پنجاب میں مردہ جانوروں کا گوشت فروخت کرنے کا مکروہ دھندہ جاری ہے، پنجاب فوڈ اتھارٹی کی ٹیم نے صوبے کے مختلف شہروں میں قائم گوشت مارکیٹوں کی چیکنگ کی، جہاں مردہ مرغیوں کے گوشت اور نیم مردہ مرغیوں کی فروخت کا انکشاف ہوا۔

پنجاب فوڈ اتھارٹی کی ڈائریکٹرآپریشنز رافعہ حیدر نے بتایا کہ چار سو کلو کے قریب نیم مردہ مرغیاں تلف کردی گئیں، اس کے علاوہ مانگا منڈی سے لاہور آنے والا نیم مردہ مرغیوں کا ٹرک بھی پکڑا گیا ہے۔

سٹی ڈسٹرکٹ کے ویٹنری افسر نے مرغیاں بیمار ہونے کی تصدیق کردی ہے۔ رافعہ حیدر نے کا مزید کہنا تھا کہ دیگر شہروں میں کی جانے والی کارروائیوں کے دوران فیصل آباد میں 1360کلو مضرصحت مرغی کا گوشت تلف کیا گیا، راولپنڈی میں 350 کلو مردہ مرغیاں جبکہ 260 کلو بیمارمرغیاں تلف کی گئئیں۔اس کے علاوہ ملتان میں کی جانے والی کارروائی میں 410کلوناقص مرغی کا گوشت تلف کیا گیا۔ اس سے قبل بھارت سے درآمد کردہ مرغی کی فیڈ میں سور کے گوشت اور چربی کے استعمال کا انکشاف ہوا تھا، جس کے بعد پنجاب اسمبلی میں فیڈ بند کروانے کے لیے قرارداد جمع کرادی گئی تھی۔

گذشتہ روز اورنگی ٹاون میں ڈکیتی کی وارداتوں کے خلاف احتجاج کرنے کے دوران پولیس کی فائرنگ سے زخمی ہونے والا شخص عباسی شہید اسپتال میں دم توڑ گیا۔ فیصل سبزواری کا کہنا ہے کہ اورنگی ٹاؤن کےمکین انصاف کیلئے سڑکوں پرنکلےتھے ایم کیوایم مظاہرین کےساتھ کھڑی ہے۔ 

تفصیلات کے مطابق اورنگی ٹاؤن میں اسلام چوک میں بڑھتی ہوئی ڈکیتیوں اور پولیس کی مبینہ ملی بھگت کے خلاف احتجاج کرنے والے علاقہ مکینوں پر پولیس کی براہراست فائرنگ سے زخمی ہونے والا نوجوان اصغر امام زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے آج دم توڑ گیا

ذرائع کے مطابق اورنگی ٹاؤن نمبر گیارہ کے بلاک جے کا رہائشی اصغر امام پولیس کی فائرنگ سے زخمی ہوا تھا جسے شدید زخمی حالت میں عباسی اسپتال منتقل کیا گیا تھا جہاں وہ دورانِ علاج زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے آج خالقِ حقیقی سے جا ملا۔

اس حوالے سے ایم کیو ایم پاکستان کے رہنما فیصل سبز واری کا میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا کہ اورنگی ٹاؤن کے مکین انصاف کیلئے سڑکوں پرنکلےتھے ایم کیوایم مظاہرین کےساتھ کھڑی ہے۔

اورنگی ٹاؤن کےرہائشیوں کےساتھ کل ظلم ہوا وہاں چوری اور ڈکیتیاں عروج پرپہنچ چکی ہیں، آئی جی سندھ اورنگی ٹاؤن واقعے کا نوٹس لیں، انہوں نے مطالبہ کیا کہ فائرنگ کرنے والوں کےخلاف مقدمہ درج کیا جائےاور نے گناہ گرفتارافراد کو فوری رہا کیا جائے۔

میری گورنر سندھ اور وزیراعلی سندھ سے اپیل ہے کہ جتنے لوگوں کو گرفتار کرکے ان پر پولیس کی جانب سے ناجائز مقدمات عائد کئے گئے ہیں انہیں تمام مقدمات سے بری کرتے ہوئے جلد از جلد رہا کیا جائے اور واقعے میں ملوث تمام پولیس اہلکاروں کیخلاف کارروائی کی جائے ۔

واضح رہے اسلام چوک کے رہائشیوں نے بڑھتی ہوئی ڈکیتیوں کے خلاف تھانے کے باہر احتجاج کر رہے تھے جس کے دوران کشیدگی بڑھ گئی اور مظاہرین کی جانب سے پتھراؤ بھی کیا گیا جس کے جواب میں پولیس نے ہوائی فائرنگ اور آنسو گیس شیلنگ بھی کی اور بعد ازاں مظاہرین کو گرفتار کرنے کے لیے گھروں پر تابڑ توڑ حملے بھی کیے گئے۔

 سندھ حکومت نے آن لائن ایمبولینس سروسز شروع کرنے کا اعلان کیا ہے ، 23فروری کو منصوبے کا افتتاح کیا جائے گا۔

تفصیلات کے مطابق صوبائی وزیرصحت سکندرمیندھرو کا کہنا ہے کہ سندھ حکومت نے آن لائن ایمبولینس سروسز شروع کرنے کا اعلان کیا ہے، پہلےمرحلےمیں ٹھٹھہ، سجاول میں آن لائن ایمبولینس سروس کا آغاز ہوگا، منصوبے کو کشمور سے کراچی تک پھیلایا جائے گا۔

وزیرصحت نے کہا کہ 23 فروری کو منصوبے کا وزیراعلیٰ ہاؤس میں افتتاح کیا جائے گا، آن لائن ایمبولینس سروسز کا نمبر1036ہوگا۔

انکا مزید کہنا تھا کہ ہر ضلع کے اسپتال میں کنٹرول روم قائم کیا جائے گا، کنٹرول روم کے لئے ٹاورز نصب کئے جارہے ہیں، ٹریکر کے ذریعے ایمبولینس کی نقل وحرکت پر نظر رکھی جائے گی۔

صوبائی وزیرصحت نے بتایا کہ 15 منٹ کے اندر ایمبولینس جائے حادثہ پر پہنچ جائے گی

وزیراعلیٰ سندھ نے اےٹی سی کی 8 عدالتیں کلفٹن سے سینٹرل جیل منتقل کرنے کی منظوری دیدی،مراد علی شاہ نے ہدایت کی کہ عدالتوں کومنتقل کرنے کا جلد ازجلد نوٹی فکیشن جاری کیا جائے.

تفصیلات کے مطابق کراچی وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ کی زیرصدارت اجلاس منعقد ہوا، جس میں وزیراعلیٰ سندھ کو انسداد دہشت گردی کے حوالے سے بریفنگ دی گئی.

اجلاس کے شرکاوں نے سید مراد علی شاہ کو بتا یا کہ موجودہ حالات میں قیدیوں کو سینٹرل جیل سےکلفٹن لانا خطرناک ہے، روزانہ قیدیوں کوکلفٹن انسداد دہشت گردی عدالتوں میں لایاجاتا ہے.

اجلاس کے دوران تجویز دی گئی کہ اے ٹی سی کی عدالتوں کو سینٹرل جیل منتقل کرنا موجودہ حالات کے پیش نظر مناسب ہے جبکہ پہلے ہی انسداد دہشت گردی کی 2 عدالتیں سینٹرل جیل میں کام کررہی ہیں.

وزیراعلیٰ سندھ نے اےٹی سی کی 8عدالتیں کلفٹن سے سینٹرل جیل منتقل کرنے کی منظوری دیدی، انہوں نے حکم دیا کہ انسداد دہشت گردی عدالتوں کوفوری طورپرمنتقل کیا جائے، مراد علی شاہ نے ہدایت کی کہ عدالتوں کومنتقل کرنے کا جلد ازجلد نوٹی فکیشن جاری کیا جائے.

 پاکستانی نیوز چینل جیو کے معروف پروگرام ‘میرے مطابق’ کی اینکر پرسن شجیہ نیازی کا نکاح ہو گیا ہے ۔

تفصیلات کے مطابق شجیہ نیازی معروف تجزیہ کار اور کالم نگار حسن نثار کے پروگرام کی میز بانی کر رہی ہیں ، اور ان معروف اینکر پرسن کا نکاح ہوگیا ہے اور انکی زندگی خوشیوں سے بھر گئی ہے ۔ ان کا نکاح پاکستانی ڈومیسٹک لیول کے معروف کھلاڑی جنید جمشید نیازی سے ہوا ہے جو نیشنل بینک آف پاکستان اور کراچی زیبراس کی ٹیموں کی جانب سے عمدہ کارکردگی پیش کر چکے ہیں ، اور آج کل آسٹریلیا میں مقیم ہیں جہاں وہ بزنس انفارمیشن ٹیکنالوجی میں اعلیٰ تعلیم حاصل کر رہے ہیں ۔ اینکر پرسن شجیہ نیازی زندگی کی اس بڑی نعمت سے بہت خوش ہیں اور حسن نثار صاحب سمیت کئی شخصیات کی جانب سے ان کیلئے نیک خواہشات کااظہار کیا جا رہا ہے

حساس اداروں کی جانب سے راولپنڈی ریلوے اسٹیشن کو بارودی مواد سے اڑانے کی اطلاع کے بعد سیکیورٹی مزید سخت کر دی گئی ہے۔تفصیلات کے مطابق راولپنڈی ریلوے اسٹیشن پر تخریب کاری کی اطلاعات ہیں اور اس حوالے سے ایس پی ریلوے شاہد شیخ نے تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ راولپنڈی ریلوے اسٹیشن پر بارودی مواد سے بھری گاڑی کے ذریعے دھماکے کی اطلاعات ملی ہیں جس کے بعد ممکنہ دہشت گردی کے پیش نظر ریلوے اسٹیشن میں تمام گاڑیوں اور موٹر سائیکلوں کا داخلہ بند کردیا گیا ہے۔ایس پی ریلوے کا کہنا ہے کہ ریلوے اسٹیشن کے تمام داخلی اور خارجی راستوں پر ایلیٹ فورس کے کمانڈوز کو تعینات کر دیا گیا ہے اور سیکیورٹی بھی مزید سخت کردی گئی ہے جس کی وجہ سے مسافروں کو بھی پریشانی کا سامنا کرنا پڑسکتا ہے۔ عوام سے درخواست ہے کہ وہ دہشت گردی کے پیش نظر ہونے والے سیکیورٹی انتظامات پر پولیس اور انتظامیہ سے تعاون کریں

ایئرپورٹ سیکیورٹی فورسز نے ایئرپورٹ کی بیرونی دیوار پھلانگ کر بھاگنے کی کوشش کرنے والے دو مشکوک افراد کو گرفتار کر کے پولیس کے حوالے کر دیاہے۔
نجی ٹی وی  کے مطابق اے ایس ایف اہلکاروں کا کہناہے کہ دونوں مشکوک افراد کا تعلق چترال سے ہے اور ان کے نام حق نواز اور خلیل الرحمان ہیں ،دونوں مشکوک افراد ایئرپورٹ کی بیرونی دیوار پھلانگ رہے تھے جس دوران انہیں کارروائی کے دوران گرفتار کیاگیاہے

پیر, 20 فروری 2017 14:52

قسمت ہی کھل گئی!

 اینکر رپرسن اور عمران خان کی سابق اہلیہ ریحام خان کا کہنا ہے کہ انھیں ملک کے بڑے ٹی وی چینلز سے اینکر بننے کی آفرز آئی ہیں ، ایک ٹی وی چینل کی رپورٹ کے مطابق ریحام خان کا کہنا تھا کہ انھیں بہت آفرز آ رہی ہیں لیکن ابھی ٹی وی ڈرامہ اور فلموں میں کام کرنے کا نہیں سوچ رہی ، انھوں نے یہ بھی انکشاف کیا کہ وہ جلد پاکستان آکر کسی اچھے تی وی چینل سے معاہدہ کر لیں گی

سکندرمیندھرو نے کہا کہ سیہون شریف دھماکےکے مزید2زخمی دم توڑ گئے، سیہون شریف دھماکے میں شہید افراد کی تعداد 90 ہوگئی ہے،  دومیتوں کی تاحال شناخت نہیں ہوسکی ہے، دونوں میتوں کو ایدھی سرد خانے منتقل کر دیا گیا ہے، سانحہ سیہون کے زخمیوں کی تعداد351 تھی۔

انکا کہنا تھا کہ 299زخمیوں کو طبی امداد کے بعد فارغ کر دیا گیا، زخمی کراچی، حیدرآباد، نوابشاہ، جامشورو میں زیرِعلاج ہیں،  بچے سمیت 4زخمیوں کی حالت انتہائی نازک ہے، چاروں شدید زخمی ٹراما سینٹر سول اسپتال کراچی میں زیرِعلاج ہیں، جن افرادکی شناخت نہیں ہوسکی، انکا ڈی این اے کرایا جارہا ہے۔

صوبائی وزیرصحت نے کہا کہ جلد عبداللہ شاہ انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز میں مزید 50ڈاکٹربھرتی کئے جائیں گے

کراچی: سابق صدر آصف علی زرداری کا کہنا ہے کہ سندھ میں کچھ خاص مدارس ہمارے بچوں کو بھٹکا رہے ہیں اور ان مدارس کے خلاف کارروائی کر کے اپنے بچوں کو غلط راہ پر چلنے سے بچانا ہو گا۔ وزیراعلیٰ ہاؤس میں شریک چیئرمین پیپلزپارٹی آصف زرداری کی زیر صدارت ملک بالخصوص صوبے میں امن و امان کی موجودہ صورتحال کے حوالے سے اہم اجلاس منعقد ہوا۔ اس موقع پر وزیراعلیٰ سندھ  مراد علی شاہ نے آصف زرداری کو بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ مدارس پر نظر رکھنے کے لئے حکومت سندھ نے 94 مدارس کی فہرست وفاق کو بھیجی تھی لیکن وفاق کی جانب سے کوئی مثبت جواب نہ ملا۔ انہوں نے مزید بتایا کہ جرائم پیشہ افراد تک پہنچنے کے لئے مجرموں کا ڈیٹا بیس اپ ڈیٹ کیا اور اس حوالے سے پولیس میں انفارمیشن ٹیکنالوجی کا ادارہ بھی بنایا۔ سندھ کے لوگ بہت پر امن ہیں اس لئے دہشت گردوں کو یہاں سے کوئی خود کش بمبار نہیں لیکن ہم دہشت گردوں کے سہولت کاروں کے حلق تک پہنچ گئے ہیں۔اس موقع پر سابق صدر کا کہنا تھا کہ ہم دین کی خدمت کرنے والے مدارس کے خلاف نہیں، ہمارے آباؤ اجداد  نے بھی مدرسہ بنایا تھا جس میں قائداعظم محمد علی جناح جیسے عظیم رہنما نے بھی تعلیم حاصل کی لیکن سندھ میں کچھ خاص مدارس ہمارے بچوں کو بھٹکا رہے ہیں، ان مدارس کے خلاف کارروائی کر کے اپنے بچوں کو غلط راہ پر چلنے سے بچانا ہو گا۔آصف زرداری نے کہا کہ ہمیں علم ہے کہ ہماری سرحد سے دہشت گرد داخل ہوتے ہیں اور یہ بھی پتا ہے کہ سندھ کے کس شہر میں کون سے سہولت کارموجود ہیں، دہشت گردوں کے گرد شکنجہ کسنے کے لئے ٹھوس اور مربوط اقدامات کرنے  کے ساتھ مؤثرحکمت عملی بنانا ہوگی۔ ان کا کہنا تھا کہ کچھ ملک دشمن قوتیں دہشت گردی کر کے پاکستان کو کمزور کرنا چاہتی ہیں لیکن ہم کسی صورت ملک کو کمزور کرنے کی کسی کو اجازت نہیں دیں گے۔ سابق صدر نے وزیراعلیٰ سندھ کو ہدایت کی کہ وفاق سے رابطہ کر کے جلد سے جلد صوبے سے افغانیوں اور دیگر غیر ملکیوں کو نکالا جائے۔اجلاس میں آئی جی سندھ اے ڈی خواجہ نے امن وامان کی صورتحال سے متعلق بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ سندھ میں 700 مزارات ہیں جن میں سے بیشتر مزارات کی 4 دیواری تک  نہیں اور کچھ کی دیواریں بہت چھوٹی ہیں جب کہ متعدد  مزارات کے ارد گرد تجاوزات قائم ہیں، اس کے علاوہ متعدد مزارات پر واچ ٹاور اور لیڈی سرچرز بھی تعینات نہیں ہیں۔

بھٹ شاہ: سیہون میں حضرت لعل شہباز قلندر کے مزار پر ہونے والے خودکش حملے کے بعد بھٹ شاہ کے مزار پر بھی دہشت گردی کے خدشے کے بعد سیکیورٹی ہائی الرٹ جبکہ صوبائی حکومت نے سندھ میں فوری طور پر 15 روز کیلئے دفعہ 144 بھی نافذ کردی گئی ہے۔ نجی ٹی وی کے مطابق حساس اداروں نے سندھ کے عظیم صوفی شاعر شاہ عبداللطیف بھٹائی کے بھٹ شاہ میں واقع مزار پر دہشت گردی کا خدشہ ظاہر کرتے ہوئے کہا گیا ہے کہ بھٹ شاہ کے مزار پر خودکش حملہ ہوسکتا ہے، رپورٹ میں اہم عمارتوں، اسکولز، اور ہسپتالوں کے بھی سیکیورٹی انتظامات سخت کرنے کی تجویز دی ہے۔ صوبائی حکومت نے رپورٹ پر فوری ایکشن لیتے ہوئے بھٹ شاہ کے مزار پر سیکیورٹی بڑھا دی ہے، جبکہ کسی بھی ممکنہ خطرے سے نمٹنے کیلئے سندھ بھر میں 15 روز کیلئے دفعہ 144 بھی نافذ کردی گئی ہے، جس کے بعد صوبے میں جلسے اور ریلیاں نہیں نکالی جاسکیں گی۔ دوسری جانب کراچی میں سول ایوی ایشن نے بھی سیکیورٹی انتظامات مزید سخت کرتے ہوئے اپنی ایس او پی بنا دی ہے اور ادارے نے مسافروں سمیت دیگر شہریوں سے بھی تعاون کی اپیل کی ہے۔ واضح رہے کہ سیہون میں لعل شہباز قلندر کے مزار پر ہونے والے خودکش حملے کے بعد کراچی میں واقع عبداللہ شاہ غازی کے مزار سمیت شاہ عبداللطیف بھٹائی کے مزار کو بھی زائرین سے خالی کراتے ہوئے عارضی طور پر بند کر دیا گیا تھا۔

فیصل آباد: پاکستان میں دہشت گردی کی حالیہ لہر کے بعد فیصل آباد میں پنجاب پولیس اور حساس اداروں کی جانب سے بائیومیٹرک چیکنگ اور سرچ آپریشن جاری ہے۔ پولیس کی طرف سے ملک دشمن عناصر کا سراغ لگانے کیلئے لائلپور ٹاؤن کے مختلف علاقوں کمشنر آفس، اقبال سٹیڈیم، سول لائنز، جنرل بس سٹینڈ سمیت کئی مقامات پر مشکوک افراد کی تصدیق بائیو میٹرک کے ذریعے عمل میں لائی گئی۔ سرچ آپریشن کے دوران پولیس کی ٹیموں نے ان علاقہ جات میں واقع ہوٹلز کی تلاشی لیتے ہوئے وہاں رہائش رکھنے والے افراد کی بھی مکمل جانچ پڑتال کی۔ ذرائع کے مطابق قانون نافذ کرنے والے اداروں کی طرف سے سرچ آپریشن کے دوران گلفشاں کالونی سے ایک مسجد کے امام خلیل الرحمن کو حراست میں لے کر نامعلوم مقام پر منتقل کر دیا گیا ہے۔


Read Basharat Online

مقبول خبریں

روزنامہ بشارت ٹویٹر

There is no friend in list


Follow Daily_Basharat on Twitter