Reporter FK

Reporter FK

Write on پیر, 20 فروری 2017

 محکمہ پنجاب فوڈ اتھارٹی نے مختلف شہروں میں کارروائیاں کرتے ہوئے مردہ مرغیوں کا گوشت اور نیم مردہ مرغیاں قبضے میں لے لیں، اہلکاروں نے فوری کارروائی کرتے ہوئے 2800 کلو سے زائد حرام گوشت تلف کردیا۔

تفصیلات کے مطابق پنجاب میں مردہ جانوروں کا گوشت فروخت کرنے کا مکروہ دھندہ جاری ہے، پنجاب فوڈ اتھارٹی کی ٹیم نے صوبے کے مختلف شہروں میں قائم گوشت مارکیٹوں کی چیکنگ کی، جہاں مردہ مرغیوں کے گوشت اور نیم مردہ مرغیوں کی فروخت کا انکشاف ہوا۔

پنجاب فوڈ اتھارٹی کی ڈائریکٹرآپریشنز رافعہ حیدر نے بتایا کہ چار سو کلو کے قریب نیم مردہ مرغیاں تلف کردی گئیں، اس کے علاوہ مانگا منڈی سے لاہور آنے والا نیم مردہ مرغیوں کا ٹرک بھی پکڑا گیا ہے۔

سٹی ڈسٹرکٹ کے ویٹنری افسر نے مرغیاں بیمار ہونے کی تصدیق کردی ہے۔ رافعہ حیدر نے کا مزید کہنا تھا کہ دیگر شہروں میں کی جانے والی کارروائیوں کے دوران فیصل آباد میں 1360کلو مضرصحت مرغی کا گوشت تلف کیا گیا، راولپنڈی میں 350 کلو مردہ مرغیاں جبکہ 260 کلو بیمارمرغیاں تلف کی گئئیں۔اس کے علاوہ ملتان میں کی جانے والی کارروائی میں 410کلوناقص مرغی کا گوشت تلف کیا گیا۔ اس سے قبل بھارت سے درآمد کردہ مرغی کی فیڈ میں سور کے گوشت اور چربی کے استعمال کا انکشاف ہوا تھا، جس کے بعد پنجاب اسمبلی میں فیڈ بند کروانے کے لیے قرارداد جمع کرادی گئی تھی۔

Write on پیر, 20 فروری 2017

گذشتہ روز اورنگی ٹاون میں ڈکیتی کی وارداتوں کے خلاف احتجاج کرنے کے دوران پولیس کی فائرنگ سے زخمی ہونے والا شخص عباسی شہید اسپتال میں دم توڑ گیا۔ فیصل سبزواری کا کہنا ہے کہ اورنگی ٹاؤن کےمکین انصاف کیلئے سڑکوں پرنکلےتھے ایم کیوایم مظاہرین کےساتھ کھڑی ہے۔ 

تفصیلات کے مطابق اورنگی ٹاؤن میں اسلام چوک میں بڑھتی ہوئی ڈکیتیوں اور پولیس کی مبینہ ملی بھگت کے خلاف احتجاج کرنے والے علاقہ مکینوں پر پولیس کی براہراست فائرنگ سے زخمی ہونے والا نوجوان اصغر امام زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے آج دم توڑ گیا

ذرائع کے مطابق اورنگی ٹاؤن نمبر گیارہ کے بلاک جے کا رہائشی اصغر امام پولیس کی فائرنگ سے زخمی ہوا تھا جسے شدید زخمی حالت میں عباسی اسپتال منتقل کیا گیا تھا جہاں وہ دورانِ علاج زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے آج خالقِ حقیقی سے جا ملا۔

اس حوالے سے ایم کیو ایم پاکستان کے رہنما فیصل سبز واری کا میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا کہ اورنگی ٹاؤن کے مکین انصاف کیلئے سڑکوں پرنکلےتھے ایم کیوایم مظاہرین کےساتھ کھڑی ہے۔

اورنگی ٹاؤن کےرہائشیوں کےساتھ کل ظلم ہوا وہاں چوری اور ڈکیتیاں عروج پرپہنچ چکی ہیں، آئی جی سندھ اورنگی ٹاؤن واقعے کا نوٹس لیں، انہوں نے مطالبہ کیا کہ فائرنگ کرنے والوں کےخلاف مقدمہ درج کیا جائےاور نے گناہ گرفتارافراد کو فوری رہا کیا جائے۔

میری گورنر سندھ اور وزیراعلی سندھ سے اپیل ہے کہ جتنے لوگوں کو گرفتار کرکے ان پر پولیس کی جانب سے ناجائز مقدمات عائد کئے گئے ہیں انہیں تمام مقدمات سے بری کرتے ہوئے جلد از جلد رہا کیا جائے اور واقعے میں ملوث تمام پولیس اہلکاروں کیخلاف کارروائی کی جائے ۔

واضح رہے اسلام چوک کے رہائشیوں نے بڑھتی ہوئی ڈکیتیوں کے خلاف تھانے کے باہر احتجاج کر رہے تھے جس کے دوران کشیدگی بڑھ گئی اور مظاہرین کی جانب سے پتھراؤ بھی کیا گیا جس کے جواب میں پولیس نے ہوائی فائرنگ اور آنسو گیس شیلنگ بھی کی اور بعد ازاں مظاہرین کو گرفتار کرنے کے لیے گھروں پر تابڑ توڑ حملے بھی کیے گئے۔

Write on پیر, 20 فروری 2017

عدالت عظمیٰ نے شریف فیملی کی شوگر ملز سے متعلق کیس کی نظر ثانی کی درخواستیں خارج کر دی۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ میں شریف فیملی کی شوگرملز سے متعلق کیس کی نظرثانی کی درخواستوں کی سماعت چیف جسٹس کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے کی، عدالت عظمیٰ نے شریف فیملی کی شوگرملز سے متعلق کیس کی نظرثانی کی درخواستیں خارج کردیں۔

سماعت کے دوران عدالت نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ ہائی کورٹ میں شوگر ملوں سے متعلق کیس شروع ہو چکا ہے، ہائیکورٹ کو معاملے کا فیصلہ کرنے دیا جائے۔

یاد رہے کہ چند روز قبل لاہور ہائیکورٹ نے بھی شریف خاندان کی تینوں شوگر ملزکو کرشنگ سے روک دیا تھا اور چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ نے وکیل کو وارننگ دیتے ہوئے کہا اگرکرشنگ ہوئی تو ذمے داری آپ پر عائد ہوگی۔

چیف جسٹس نے ریمارکس میں کہا کہ متعلقہ سیشن ججز کو ہدایات جاری کریں گے کہ وہ جائزہ لیں کہ کرشنگ ہورہی ہے یا نہیں۔

عدالت نے رجسٹرار ہائیکورٹ کو سیشن ججز سے رپورٹ طلب کرنے کے احکامات جاری کئے تھے

Write on پیر, 20 فروری 2017

قیمتی موبائل فون کی حفاظت کے لیے ہر کوئی فکر مند رہتا ہے اور کوشش یہی تہتی ہے کہ فون ہاتھ سے گر کر ٹوٹ نہ جائے ایسی صورت میں فون قابل مرمت تو ہوجاتا ہے لیکن اگر یہی فون پانی میں گر جائے تو قابل مرمت نہیں رہتا۔

تاہم کچھ ایسے سادے سے طریقے ہیں جنہیں آزما کر پانی میں گرنے کے باوجود فون کو قابل استعمال بنایا جا سکتا ہے اور حغیران کن طور پر یہ طریقے گھر میں ہی آزمائے جا سکتے ہیں اور کسی راکٹ سائنس کی بھی ضرورت نہیں۔

موبائل کو پانی سے نکالیے اور خشک کیجیے

جیسے ہی موبائل پانی میں گر جائے تو اسے فوری طور پر پانی سے نکال لیا جائے اور تولیے یا کسی کپڑے کی مدد سے فوری طور اوپری سطح کو مکمل طور پر خشک کر لیا جائے۔

mobile-post-5

فون کو فوری طور پر آن نہ کریں

فون کو پانی سے باہر نکالنے اور اوپری سطح کو مکمل خشک کیے جانے کے باوجود اسے فوری طور پر آن نہ کیجیے اس طرح پانی قطرے سرکٹ میں جا کر شارٹ سرکٹ کا باعث بن سکتے ہیں اور اس طرح فون مکمل طور پو ناکارہ بن سکتا ہے اس لیے فون کو کسی صورت آن نہ کریں جب تک کہ درج ذیل طریقے استعمال نہ کر لیں۔

mobile-post-7

بیٹری کو خشک کیا جائے

اوپری سطح کو مکمل طور پر خشک کرنے کے بعد موبائل کے کور کو ہٹا کر بیٹری کو باہر نکال لیا جائے اور اسے تولیے کی مدد سے صاف کرکے خشک کر لیا جائے۔

mobile-post-2

سم کارڈ نکالیں

موبائل کے بیٹری کو خشک کرنے کے بعد اس میں سم بھی نکال لی جائے اور اسے بھی خشک کیا جائے اسی طرح میموری کارڈ کو بھی نکال کر خشک کیا جائے اور بیٹری، سم اور میموری کارڈ کو ہلکی دھوپ میں رکھ دیا جائے تاہم یاد رہے انہیں زیادہ گرم نہیں ہونے دیں اور فوری طور پر اُٹھالیں۔

mobile-post-4

موبائل کے اندرونی حصوں کو پانی کے ننھے ننھے قطروں کو صاف کرنے کے لیے ویکیوم کلینیئر کی مدد بھی لی جا سکتی ہے جس کے لیے کچھ فاصلے پر ویکیوم کلینیئرز کو رکھ کر موبائل کو اندر سے مکمل طور پر خشک کرلیا جائے گا۔

mobile-post-3

چاول کو آزمائیں

موبائل کو پانی سے مکمل طور پر خشک کرنے کے لیے ایک آزمودہ گھریلو ٹوٹکا اسے کچے چاول کے ڈبے میں دبا دیا جائے تو تین دن کے اندر اندر چاول موطائل کئ اندرونی حصوں میں چھپے پانی کے قطروں کو بھی اپنے اندر جذب کر لیں گے اور فون مکمل طور پر خشک ہوجائے گا۔

mobile-post-1

سلیکا جیل بھی فائدہ مند ہے

فون کے اندر موجود پانی کے ننھے ننھے قطروں کو خشک کرنے کے لیے چاول کے ساتھ ساتھ سلیکا جیل کو بھی استعمال کیا جا سکتا ہے جس کے لیے دوائی کے ساتھ آنے والی سلیکا جیل کی تھیلی میں ذروں کو نکال کر موبائل میں ڈال دیا جائے تو یہ ذرے پانی قطروں کو خشک کر دیتے ہیں لیکن یہ طریقہ چاول کے مقابلے میں کم محفوظ ترین ہے۔

mobile-post-8

ان طریقوں کے استعمال بعد اس بات کا یقین کر لیا جائے کہ فون مکمل طور پر خشک ہوچکا ہے اس کے بعد فون کو آن کیا جا سکتا ہے تاہم پہلے بیٹری کو چارج کر لینا زیادہ مناسب رہے گا۔

mobile-post-9

Write on پیر, 20 فروری 2017

 سندھ حکومت نے آن لائن ایمبولینس سروسز شروع کرنے کا اعلان کیا ہے ، 23فروری کو منصوبے کا افتتاح کیا جائے گا۔

تفصیلات کے مطابق صوبائی وزیرصحت سکندرمیندھرو کا کہنا ہے کہ سندھ حکومت نے آن لائن ایمبولینس سروسز شروع کرنے کا اعلان کیا ہے، پہلےمرحلےمیں ٹھٹھہ، سجاول میں آن لائن ایمبولینس سروس کا آغاز ہوگا، منصوبے کو کشمور سے کراچی تک پھیلایا جائے گا۔

وزیرصحت نے کہا کہ 23 فروری کو منصوبے کا وزیراعلیٰ ہاؤس میں افتتاح کیا جائے گا، آن لائن ایمبولینس سروسز کا نمبر1036ہوگا۔

انکا مزید کہنا تھا کہ ہر ضلع کے اسپتال میں کنٹرول روم قائم کیا جائے گا، کنٹرول روم کے لئے ٹاورز نصب کئے جارہے ہیں، ٹریکر کے ذریعے ایمبولینس کی نقل وحرکت پر نظر رکھی جائے گی۔

صوبائی وزیرصحت نے بتایا کہ 15 منٹ کے اندر ایمبولینس جائے حادثہ پر پہنچ جائے گی

Write on پیر, 20 فروری 2017

شدت پسند تنظیم داعش آئے روز معصوم اور بے گناہ لوگوں پر مظالم کی انتہا کرتے ہوئے انہیں نت نئے طریقوں سے قتل اور ان پر ڈھائے جانے والے مظالم کی ویڈیوز وائرل کر کے پوری دنیا میں خوف و حراس پھیلاتے رہتے ہیں لیکن حال ہی میں سیکورٹی فورسز نے بروقت کاروائی کرتے ہوئے داعش کے ایسے ایجنٹ کو گرفتار کر لیا ہے کہ اگر اسے گرفتار نہ کیا جاتا تو عالم اسلام کو ایک ایسا دکھ ملنا تھا جسکا شاید ہی کبھی ازالہ کیا جاسکتا۔تفصیلات کے مطابق عراق کے شہر کربلا میں سیکورٹی فورسز نے کاروائی کرتے ہوئے داعش کے ایک ایجنٹ کو گرفتار کیا ہے جوخواتین کا روپ دھار کر نواسہ رسولﷺ حضرت امام حسین علیہ السلام کے روضہ میں داخل ہونے کی کوشش کر رہا تھا، خواتین کا روپ دھارے اس شخص کو سیکورٹی اہلکاروں نے شک کی بناء پر گرفتار کیا تو بعد میں پتہ چلا کہ یہ خاتون نہیں بلکہ اک مرد ہے۔  

 

معتبر ذرائع نے بتایا ہے کہ داعش کا ایجنٹ روضہ امام حسین علیہ السلام میں داخل ہونے کی کوشش کر رہا تھا کہ اچانک وہاں پر تیعنات اہلکاروں کو اس پر شک گزرا جسکی بنا پر انہوں نے اسے تلاشی اور تحقیقات کے لیے نا معلوم مقام پر متنقل کیا تو پتہ چلا کہ یہ کوئی خاتون نہیں بلکہ ایک مرد ہے اور خطرناک شدت پسند تنظیم داعش کا ایجنٹ ہے جسکا مقصد کربلا میں موجود روضہ نواسہِ رسولﷺ حضرت اما حسین علیہ السلام کو نشانہ بنانا تھا۔ تصاویر میں بھی دیکھا جاسکتا ہے کہ کس طرح یہ شخص خواتین کی طرح روپ دھار کہ آیا تھا کہ کسی کو پتہ نہ چلے اور یہ اپنے مضموم مقاصد میں کامیاب ہوسکے. دوسری جانب سیکورٹی اہلکاروں نے اسے نامعلوم مقام پر منتقل کر دیا ہے جہاں اس سے مزید تحقیقات کی جائیں گی اور عراق کے شہر کربلا کی سیکورٹی کو مزید سخت کر دیا گیا ہے۔

Write on پیر, 20 فروری 2017

وزیراعلیٰ سندھ نے اےٹی سی کی 8 عدالتیں کلفٹن سے سینٹرل جیل منتقل کرنے کی منظوری دیدی،مراد علی شاہ نے ہدایت کی کہ عدالتوں کومنتقل کرنے کا جلد ازجلد نوٹی فکیشن جاری کیا جائے.

تفصیلات کے مطابق کراچی وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ کی زیرصدارت اجلاس منعقد ہوا، جس میں وزیراعلیٰ سندھ کو انسداد دہشت گردی کے حوالے سے بریفنگ دی گئی.

اجلاس کے شرکاوں نے سید مراد علی شاہ کو بتا یا کہ موجودہ حالات میں قیدیوں کو سینٹرل جیل سےکلفٹن لانا خطرناک ہے، روزانہ قیدیوں کوکلفٹن انسداد دہشت گردی عدالتوں میں لایاجاتا ہے.

اجلاس کے دوران تجویز دی گئی کہ اے ٹی سی کی عدالتوں کو سینٹرل جیل منتقل کرنا موجودہ حالات کے پیش نظر مناسب ہے جبکہ پہلے ہی انسداد دہشت گردی کی 2 عدالتیں سینٹرل جیل میں کام کررہی ہیں.

وزیراعلیٰ سندھ نے اےٹی سی کی 8عدالتیں کلفٹن سے سینٹرل جیل منتقل کرنے کی منظوری دیدی، انہوں نے حکم دیا کہ انسداد دہشت گردی عدالتوں کوفوری طورپرمنتقل کیا جائے، مراد علی شاہ نے ہدایت کی کہ عدالتوں کومنتقل کرنے کا جلد ازجلد نوٹی فکیشن جاری کیا جائے.

Write on پیر, 20 فروری 2017

 پاکستانی نیوز چینل جیو کے معروف پروگرام ‘میرے مطابق’ کی اینکر پرسن شجیہ نیازی کا نکاح ہو گیا ہے ۔

تفصیلات کے مطابق شجیہ نیازی معروف تجزیہ کار اور کالم نگار حسن نثار کے پروگرام کی میز بانی کر رہی ہیں ، اور ان معروف اینکر پرسن کا نکاح ہوگیا ہے اور انکی زندگی خوشیوں سے بھر گئی ہے ۔ ان کا نکاح پاکستانی ڈومیسٹک لیول کے معروف کھلاڑی جنید جمشید نیازی سے ہوا ہے جو نیشنل بینک آف پاکستان اور کراچی زیبراس کی ٹیموں کی جانب سے عمدہ کارکردگی پیش کر چکے ہیں ، اور آج کل آسٹریلیا میں مقیم ہیں جہاں وہ بزنس انفارمیشن ٹیکنالوجی میں اعلیٰ تعلیم حاصل کر رہے ہیں ۔ اینکر پرسن شجیہ نیازی زندگی کی اس بڑی نعمت سے بہت خوش ہیں اور حسن نثار صاحب سمیت کئی شخصیات کی جانب سے ان کیلئے نیک خواہشات کااظہار کیا جا رہا ہے


Read Basharat Online

مقبول خبریں

روزنامہ بشارت ٹویٹر

There is no friend in list


Follow Daily_Basharat on Twitter