ہیڈلائنز

Reporter FK

Write on جمعرات, 22 جون 2017

 کراچی سمیت کل ملک بھر میں عالمی یوم القدس منایا جائے گا۔ قبلہ اول کی آزادی‘ فلسطینیوں سے اظہار یکجہتی کیلئے مختلف مقامات پر جلوس نکالے جائیں گے، جبکہ یوم القدس کے حوالہ سے مختلف مقامات پر خصوصی محافل کا اہتمام ہوگا، مساجد میں فلسطین کی آزادی ‘ مسلمانوں کے اتحاد اور دنیا بھر میں جاری مسلمانوں کے خلاف نفرت انگیز رویئے کے خلاف بھی پر امن احتجاج کیا جائے گا۔

 نیوز کے مطابق اسلام آباد،لاہور،پشاور، سکھر، حیدرآباد ،کوئٹہ سمیت پاکستان کے تمام چھوٹے بڑے شہروں میں یوم القدس کی احتجاجی ریلیاں نکالی جائیں گے۔

پاکستان میں یوم القدس کی ریلیوں کو اہتمام کرنے والی جماعت امامیہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن کے ترجمان نے  بتایا کہ انکی جماعت کی جانب سے ملک بھر میں 200 سے زائد مقامات پر القدس ریلیاں نکالی جارہی ہیں۔

کراچی میں تحریک آزادی القدس کےنام سے نکالی جانے والی ریلی دنیا کی تیسری بڑی ریلی شمار کی جاتی ہے، جو کل نمائش چورنگی سے شروع ہوکر تب سینٹر پر اختتام پذیر ہوگئی ۔

علاوہ ازین دیگر سیاسی و مذہبی جماعتوں کی جانب سے بھی ملک بھر میں یوم القدس کی احتجاجی ریلیاں نکالی جارہی ہیں، جبکہ اسلام آباد میں تمام مذہبی و سیاسی جماعتوں نے ملی یکجہتی کونسل کے پلٹ فورم سے یوم القدس منانے کا اعلان کیا ہے۔

واضح رہے کہ رمضان المبار ک کے آخری جمعہ کو انقلاب اسلامی ایران کے بانی رہنما امام خمینی نے یوم القدس منانے کا اعلان کیا تھااور انہوںاس دن کو منانا پر مسلمان پر واجب قرار دیتے ہوئے یوم القدس کو یوم اللہ اور یوم رسول اللہ (ص) قرار دیا۔

آج امریکا یورپ سمیت دنیا بھر میں جمعۃ الودع کو یوم القدس منایا جاتا ہے، اس دن ناصر ف مسلمان بلکہ ہر مذہب سے تعلق رکھنے والا انسان فلسطین میں جاری صہیونی جارحیت اور بیت المقدس پر اسرائیل کے غاصبانہ قبضہ کے خلاف آواز بلند کرتا ہے۔

سیاسیات کے ماہرین امام خمینی کے اس فیصلہ کو انکی سیاسی جیت قرار دیا ہے، انکا کہناہے کہ امام خمینی یوم القدس منانے کا اعلان کرکے ناصر ف اسلامی دنیا بلکہ عالم اقوام میں مسئلہ فلسطین کو تاابد زندہ کردیا ہے۔

Write on جمعرات, 22 جون 2017

قرآن حکیم ، فرقان حمید میں اﷲ رب العزت کا ارشاد گرامی ہے، مفہوم و ترجمہ :

 

’’ حم! اس کتاب روشن کی قسم کہ ہم نے اس کو ( قرآن مجید) مبارک رات میں نازل فرمایا، ہم تو رستہ دکھانے والے ہیں۔ اسی رات میں تمام حکمت کے کام فیصل کیے جاتے ہیں (یعنی) ہمارے ہاں سے حکم ہوکر۔ بے شک ہم ہی (پیغمبر) بھیجتے ہیں۔ (یہ) تمہارے پروردگار کی رحمت ہے۔ وہ سننے والا جاننے والا ہے۔‘‘ (سورۃ الدخان)

لیلۃالقدر جسے عرف عام میں شب قدر کہا جاتا ہے۔ اس رات کو اسلامی عبادات میں بڑی  اہمیت حاصل ہے۔ رمضان المبارک اور قرآن مجید کا گہرا تعلق ہے اور یہ عظمتوں والی رات اسی ماہ مقدس کے آخری عشرے کی طاق راتوں میں سے کوئی ایک ہے۔ رمضان المبارک نزول قرآن کا مہینہ ہے۔ اﷲ تعالیٰ نے انسانیت کی فوز و فلاح‘ دنیا و آخرت کی کام یابی اور آخری پیغمبر محمّد صلی اﷲ علیہ وسلم کے ذریعے آخری پیغام ہدایت عطا کیا۔ گویا  اس ماہ مبارک میں جمیع خصائل سمو دیے گئے۔ جس شب یہ قرآن مجید لوح محفوظ سے آسمان دنیا پر نازل کیا گیا، اسے لیلۃالقدر کہتے ہیں۔

 

نبی کریم صلی اﷲ علیہ وسلم کے قلب اطہر پر یوں تو ساڑھے تیئیس برس میں موقع بہ موقع قرآن کریم نازل ہوتا رہا، یہاں تک کہ تکمیل قرآن ہوا۔ البتہ لوح محفوظ سے مکمل قرآن ایک رات میں ہی آسمان دنیا پر نازل کیا گیا، جہاں سے جبریل امینؑ بہ حکم ربی اسے صاحبِ قرآن محمّد رسول اﷲ صلی اﷲ علیہ وسلم تک پہنچاتے رہے۔ اﷲ تبارک و تعالیٰ کے نزدیک یہ رات نزول قرآن کی وجہ سے انتہائی مبارک قرار پائی اور خود کتاب مقدس میں اس کی عظمت و فضیلت کا اظہار فرما دیا۔

مندرجہ بالا آیات کریمہ میں اسی جانب اشارہ کیا گیا ہے۔ واضح طور پر بتایا کہ جس شب اسے نازل کیا گیا بہ ظاہر تو وہ بھی ایک رات ہی ہے تاہم نزول قرآن کی برکت نے اس رات کو تمام راتوں پر فضیلت عطا کر دی اور ہم نے اس رات کو انتہائی مبارک بنا دیا ہے۔ اس رات ہمارے تمام امور حکمت کے ساتھ فیصل کیے جاتے ہیں یعنی موت و حیات سے لے کر گردش لیل و نہار میں وقوع پذیر ہونے والے تمام تر حوادث و واقعات کے احکامات متعلقہ فرشتوں کے حوالے کر دیے جاتے ہیں۔

چناں چہ حدیث میں نبی کریم صلی اﷲ علیہ وسلم سے مروی ہے: ’’ شب قدر کو اﷲ تعالیٰ مغرب سے ہی آسمان دنیا پر اجلال فرماتا ہے اور اعلان کیا جاتا ہے۔

ہے کوئی مجھ سے مغفرت کا طلب گار کہ میں اس کے گناہوں کو معاف فرماؤں۔

ہے کوئی بیماریوں سے شفا و تن درستی کا طلب گار کہ میں اسے شفا عطا فرماؤں۔

ہے کوئی روزی کا طلب گار کہ میں اس کی روزی میں برکت عطا فرماؤں۔

تمام شب یہ اعلان ہوتا رہتا ہے۔‘‘

شب قدر کو نزول قرآن کی برکت سے اس قدر فضیلت و بزرگی حاصل ہوگئی کہ خود قرآن مجید اس پر دلالت اس انداز میں کرتا ہے۔

’’ ہم نے (اس قرآن مجید) کو انتہائی قدر و منزلت والی رات میں نازل کیا۔ اور تمہیں کیا معلوم کہ شب قدر کیا ہے؟ شب قدر (عبادت و فضیلت کے لحاظ سے) ہزار مہینوں سے بہتر ہے۔ اس میں روح (الامین جبریل ؑ) اور فرشتے ہر کام کے (انتظام) کے لیے اپنے پروردگار کے حکم سے اترتے ہیں۔ یہ (رات) طلوع فجر تک (امان اور) سلامتی ہے۔‘‘

(سورۃ القدر)

ان آیات کریمہ سے واضح ہوتا ہے کہ یہ شب کس قدر اہمیت و فضیلت والی ہے۔ ایک رات کی عبادت اہل ایمان کے لیے تراسی برس کی عبادتوں سے بھی افضل و برتر ہے۔ یہ تو صرف کم از کم حد بیان ہوئی ہے۔ ہزار مہینوں سے کس قدر افضل ہے وہ تو اﷲ تعالیٰ ہی بہتر جانتا ہے۔

حدیث میں آتا ہے کہ نبی کریم صلی اﷲ علیہ وسلم نے بنی اسرائیل کے ایک شخص کی عبادت و ریاضت کا تذکرہ فرماتے ہوئے ارشاد فرمایا: اس نے اسّی برس سے زیادہ عمر کا حصہ اﷲ تعالیٰ کی بے ریا عبادت میں گزار دیا۔ جس پر صحابہ کرام رضوان اﷲ تعالیٰ علیہم اجمعین کو سخت ملال ہوا کہ ہماری تو اتنی عمریں بھی نہیں اور عمر کا بیشتر حصہ کفر و شرک میں گزار دیا‘ ہمیں تو وہ اعزاز و اکرام حاصل ہی نہیں ہوسکتا جو پچھلی امتوں کے صلحاء کو حاصل ہوا۔ اﷲ تعالیٰ نے اہل ایمان کے اس اضطراب اور جنت کی طلب و جستجو کو دیکھتے ہوئے قیامت تک کے آنے والے امت محمّدیہ صلی اﷲ علیہ وسلم کے لیے یہ منفرد اعزاز عطا فرما دیا کہ اﷲ تعالیٰ نے نزول قرآن کی برکت سے اس ایک رات کو ہزار مہینوں سے افضل قرار دے دیا کہ مومن آزردہ خاطر نہ ہوں۔ اﷲ تعالیٰ نے کمال مہربانی سے اس رات کی عبادت کا اجر و ثواب بڑھا چڑھا کر عطا فرما دیا اور لطف کی بات یہ ہے کہ ایک بندۂ مومن کی زندگی میں یہ عظیم رات کتنی مرتبہ آتی ہے۔ رب تعالیٰ کی رحمتوں کا کوئی حساب ہی نہیں کیا جاسکتا۔

رحمت عالم صلی اﷲ علیہ وسلم کا ارشاد گرامی ہے: ’’ جس شخص نے لیلۃالقدر میں ایمان اور ثواب کی حیثیت سے عبادت کی تو اﷲ تعالیٰ اس کے تمام پچھلے گناہ معاف فرما دے گا۔‘‘

(بخاری)

ام المومنین سیدہ عائشہ صدیقہ رضی اﷲ تعالیٰ عنہا روایت کرتی ہیں کہ نبی کریم ﷺ رمضان کے آخری عشرے میں خوب عبادت فرماتے۔ لیلۃالقدر میں شب بیداری فرماتے اور اپنے اہل و عیال کو بھی جگاتے۔‘‘

(مشکوٰۃ)

اب اس بات کا تعین کرنا کہ کون سی رات ہی لیلۃالقدر ہے۔ بعض محققین کے نزدیک ستائیسویں شب ہی لیلۃالقدر ہے۔ جب کہ ایک روایت میں نبی صلی اﷲ علیہ وسلم نے فرمایا کہ رمضان کے آخری عشرے کی طاق راتوں میں لیلۃالقدر کو تلاش کرو۔ گویا پورا عشرہ ہی خوب ریاضت و جدوجہد والا ہے۔ جب کہ ہمارا طرز عمل اس کے بالکل برعکس ہے۔ آخری عشرے میں بازاروں کی رونقیں اپنے عروج پر پہنچ جاتی ہیں اور ہم خواب غفلت کا شکار ہوکر ان عظیم گھڑیوں کو ضایع کر بیٹھتے ہیں۔ کون جانے آئندہ برس ہمیں یہ سعادت نصیب بھی ہوتی ہے کہ نہیں۔ لہٰذا انتہائی ذوق و شوق اور خشیت الٰہی کے ساتھ ان راتوں کی عبادتوں کا اہتمام کرنا چاہیے۔ تاکہ ہم اپنے رب سے جہنم سے آزادی کے پروانے حاصل کرسکیں جب کہ ہمارا ازلی دشمن شیطان ہمیں دیگر امور میں الجھا کر برباد کرنا چاہتا ہے۔

ام المومنین سیدہ عائشہ رضی اﷲ تعالیٰ عنہا نے امام کائنات ﷺ سے دریافت کیا یارسول اﷲ صلی اﷲ علیہ وسلم! اگر میں ا س رات کو پالوں تو اﷲ سے کیا دعا کروں۔ نبی کریم صلی اﷲ علیہ وسلم نے فرمایا: اﷲ سے یہ دعا کرو۔

’’ اے اﷲ آپ معاف کرتے ہیں، معافی کو محبوب رکھتے ہیں، پس مجھے معاف کر دیجیے۔‘‘

یہ کس قدر جامع دعا ہے جو رحمت عالم صلی اﷲ علیہ وسلم نے تعلیم فرمائی۔ ہمیں بھی اس عظیم رات کی فضیلتوں اور برکتوں کو حاصل کرنے کی جستجو کرنی چاہیے۔ کثرت سے مذکورہ دعا پڑھیے۔ اپنے رب کے حضور رات کی تنہائی میں اشک ندامت بہا کر مغفرت و بخشش کے پروانے حاصل کیجیے۔ اﷲ تعالیٰ ہمیں صحیح معنوں میں اس شب عظیم کی معرفت اور برکتیں عطا فرمائے۔

آمین یا رب العالمین

Write on جمعرات, 22 جون 2017

آئندہ سال پی ایس ایل کے 7، 8 میچ پاکستان میں ہوںگے: نجم سیٹھی چیئرمین پاکستان سپر لیگ نجم سیٹھی کا کہنا ہے کہ آئندہ سال پی ایس ایل کے 7تا 8 میچ پاکستان کے مختلف شہروں میں کرائے جائیں گے۔انہوں نے مزید کہا کہ پی ایس ایل کے لیے غیرملکی کھلاڑیوں سے بات چیت جاری ہے،پاکستان نے دنیا کی ٹاپ ٹیموں کو شکست دی ہے۔نجم سیٹھی کا مزید کہنا

تفصیلات کے مطابق آئندہ سال پی ایس ایل کے 7، 8 میچ پاکستان میں ہوںگے: نجم سیٹھی چیئرمین پاکستان سپر لیگ نجم سیٹھی کا کہنا ہے کہ آئندہ سال پی ایس ایل کے 7تا 8 میچ پاکستان کے مختلف شہروں میں کرائے جائیں گے۔انہوں نے مزید کہا کہ پی ایس ایل کے لیے غیرملکی کھلاڑیوں سے بات چیت جاری ہے،پاکستان نے دنیا کی ٹاپ ٹیموں کو شکست دی ہے۔نجم سیٹھی کا مزید کہنا ہے کہ گزشتہ 8 سال میں دیگر ممالک نے اپنی لیگز بنالی تھیں، اپنی لیگز بنالی تھیں، پاکستان میں لیگزنہ ہونے کی وجہ سے کھلاڑیوں کو فارمیٹ سمجھ نہیں آرہا تھاہے کہ گزشتہ 8 سال میں دیگر ممالک نے اپنی لیگز بنالی تھیں، پاکستان میں لیگزنہ ہونے کی وجہ سے کھلاڑیوں کو فارمیٹ سمجھ نہیں آرہا تھاپاکستان میں لیگزنہ ہونے کی وجہ سے کھلاڑیوں کو فارمیٹ سمجھ نہیں آرہا تھاہے کہ گزشتہ 8 سال میں دیگر ممالک نے اپنی لیگز بنالی تھیں، پاکستان میں لیگزنہ ہونے کی وجہ سے کھلاڑیوں کو فارمیٹ سمجھ نہیں آرہا تھا

Write on جمعرات, 22 جون 2017

یکم جولائی کے بجائے آج سے نافذ وصول کیا جائے گا۔ مصنوعی پلکیں، رنگین لینز، زلفیں سنوارنے کے آلات، کریم، شیمپو اور ٹانک مہنگے، فیس کریم اور پاؤڈر کے دام بھی بڑھ گئے۔فیڈرل بورڈ آف ریونیو نے خواتین کی عید خراب کر دی۔ غیرملکی میک اپ آئٹمزوقت سے دس دن پہلے پانچ فیصد مہنگی کر دی گئیں۔ مسکارا، پرفیومز، سرخی پاؤڈر پر ڈیوٹی پندرہ سے بیس فیصد

کرنے کا نوٹیفکیشن جاری کر دیا گیا۔ آنکھوں کے لئے مصنوعی پلکیں، رنگین لینز، زلفیں سنوارنے کے آلات، کریم ، شیمپو اور ٹانک مہنگے ہو گئے۔ چہرے کو چاند بنانے کیلئے فیشل کرانا بھی مشکل ہو گیا۔ ہاتھ پاؤں کا حسن تفصیلات کے مطابق یکم جولائی کے بجائے آج سے نافذ وصول کیا جائے گا۔ مصنوعی پلکیں، رنگین لینز، زلفیں سنوارنے کے آلات، کریم، شیمپو اور ٹانک مہنگے، فیس کریم اور پاؤڈر کے دام بھی بڑھ گئے۔فیڈرل بورڈ آف ریونیو نے خواتین کی عید خراب کر دی۔ غیرملکی میک اپ آئٹمزوقت سے دس دن پہلے پانچ فیصد مہنگی کر دی گئیں۔ مسکارا، پرفیومز، سرخی پاؤڈر پر ڈیوٹی پندرہ سے بیس فیصد کرنے کا نوٹیفکیشن جاری کر دیا گیا۔ آنکھوں کے لئے مصنوعی پلکیں، رنگین لینز، زلفیں سنوارنے کے آلات، کریم ، شیمپو اور ٹانک مہنگے ہو گئے۔ چہرے کو چاند بنانے کیلئے فیشل کرانا بھی مشکل ہو گیا۔ ہاتھ پاؤں کا حسن بڑھانے والی نیل پالش اور گرمیوں کی عید کی سب سے بڑی ضرورت پرفیوم کی قیمت میں بھی اضافہ کر دیا گیا۔بڑھانے والی نیل پالش اور گرمیوں کی عید کی سب سے بڑی ضرورت پرفیوم کی قیمت میں بھی اضافہ کر دیا گیا۔

Write on جمعرات, 22 جون 2017

اسلام آباد: بھارتی جاسوس کلبھوشن یادیو نے آرمی چیف قمر جاوید باجوہ سے رحم کی اپیل کر دی۔تفصیلات کے مطابق کلبھوشن یادیو نے جاسوسی اور دہشتگردی کی کارروائیوں پر آرمی چیف سے معافی مانگ لی ہے ۔ اپیل میں کلبھوشن نے تمام الزامات کا اعتراف کیا ہے ۔آئی ایس پی آر کے مطابق کلبھوشن یادیو کو جاسوسی کے الزام میں موت کی سزا سنائی گئی تھی اور ملٹری

تفصیلات کے مطابق بھارتی جاسوس کلبھوشن یادیو نے آرمی چیف قمر جاوید باجوہ سے رحم کی اپیل کر دی۔تفصیلات کے مطابق کلبھوشن یادیو نے جاسوسی اور دہشتگردی کی کارروائیوں پر آرمی چیف سے معافی مانگ لی ہے ۔ اپیل میں کلبھوشن نے تمام الزامات کا اعتراف کیا ہے ۔آئی ایس پی آر کے مطابق کلبھوشن یادیو کو جاسوسی کے الزام میں موت کی سزا سنائی گئی تھی اور ملٹری ایپلٹ کورٹ نے کلبھوشن یادیو سزائے موت کے خلاف اپیل کو مسترد کر دیا تھا۔ آئی ایس پی آر کے مطابق کلبھوشن یادیو کی وجہ سے بہت سی جانوں اور املاک کو نقصان پہنچا۔ ایپلٹ کورٹ نے کلبھوشن یادیو سزائے موت کے خلاف اپیل کو مسترد کر دیا تھا۔ آئی ایس پی آر کے مطابق کلبھوشن یادیو آئی ایس پی آر کے مطابق کلبھوشن یادیو کی وجہ سے بہت سی جانوں اور املاک کو نقصان پہنچا۔ ایپلٹ کورٹ نے کلبھوشن یادیو سزائے موت کے خلاف اپیل کو مسترد کر دیا تھا۔ آئی ایس پی آر کے مطابق کلبھوشن یادیو کی وجہ سے بہت سی جانوں اور املاک کو نقصان پہنچا۔کی وجہ سے بہت سی جانوں اور املاک کو نقصان پہنچا۔

Write on جمعرات, 22 جون 2017

امریکا میں’ فادرز ڈے‘ سے ایک ہفتہ قبل 40 سالہ لڑکی جولی جاسٹمنڈ کی فیس بک کے ذریعے اپنے والد سےپہلی ملاقات ممکن ہوسکی۔جو لی کو اپنے والد سے متعلق کچھ علم نہیں تھا ۔ اور نہ ہی انہوں نے کبھی والد کو کہیں دیکھا تھا ۔ لیکن انہوں تجسس ضرور تھا اسی لئے وہ ان کے بارے میں جا ننے کی کو شش میں لگی رہیں ۔انہیں والد سے متعلق صرف وہی چند باتیں

معلوم تھیں جو ان کی والدہ نے بتائی تھیں۔جولی کا کہنا ہے کہ ان کے والد 40 سال پہلے یعنی 1970 میں ایک مقامی ریسٹورنٹ میں ملازمت کیا کرتے تھے۔ والدکے نا م سے متعلق انہیں صرف یہ پتہ تھا کہ شروع میں ’ال‘ آتا ہے ۔جولی نے یہ ساری معلومات ایک فیس بک گروپ پر اپ لو ڈ کردیں اور مختلف لو گو ں سے اس حوالے سے معلوم کرنا شروع کر دیا ۔پو سٹ دیکھنے کے بعدریسٹورینٹ کے مالک نے جولی سے رابطہ کیا اور اسے بتا یا کہ وہ ’ النوزیاٹا ‘نامی ایک شخص کو جانتے ہیں جو غالباً40 سال پہلے ان کے ہوٹل میں کام کیا کرتا تھا۔ریسٹورنٹ کے مالک نے جولی سے متعلق النوزیاٹا کو بتایا اور دیکھتےہی دیکھتے حالات و واقعات اور شواہد اس طرح ترتیب پائے کہ بلاآخر دونوں ایک دوسرے سے ملنے میں کا میاب ہوگئے ۔جولی نے اپنے والد سے ملنے کے لئے نیو جرسی سے کولا راڈو تک کا سفر کیا ۔ بلا آخر 11 جو ن کو باپ بیٹی ملنے میں کا میا ب ہو گئے ۔تریسٹھ سالہ النوزیاٹا کا کہنا ہے کہ 4 دہائیوں قبل جب جولی کی ماں حاملہ تھی تو وہ اسے چھوڑ کر چلا گیا تھا ۔ اس کا کہنا تھا کہ اپنی بیٹی سے ملنا اس کی زندگی کا بہت ہی خو شگوار لمحہ ہے۔ اب وہ کبھی اپنی بیٹی کو خو د سے جدا نہیں ہونے دیں گے

Write on جمعرات, 22 جون 2017

اسلام آباد: وفاقی حکومت کی طرف سے25جون کو مرکزی رویت ہلال کمیٹی کااجلاس بیس سال بعد پشاور میںطلب کرنے کااقدام بھی بے سود ،مفتی شہاب الدین پوپلزئی نے اپنے 29روزے مکمل ہونے پر عیدکاچانددیکھنے کے لیے اجلاس 24جون کوطلب کرلیاہے اورمرکزی رویت ہلال کمیٹی کوبھی دعوت دی ہے کہ وہ ان کے اجلاس میں شرکت کریں پشاورمیں اگرپچیس جون کی عیدہوئی تومرکزی رویت ہلال کمیٹی کااجلاس عیدملن پارٹی بن جائے گا وفاقی حکومت کی طرف سے ایک طویل عرصے کے بعد پشاورمیں مرکزی رویت ہلال کمیٹی کااجلاس طلب کرنے کا اقدام ضائع ہونے کاخدشہ پیداہوگیاہے کیو ں کہ مرکزی رویت ہلال کمیٹی کااجلاس اس لیے پشاورطلب کیاتھا کہ ملک میں ایک ہی دن عیدبنائی جائے مگروزارت مذہبی امورکے اس ناعاقبت اندیشانہ فیصلے سے قوم کوفائدہ ہونے کی بجائے الٹانقصان ہی ہوگاکیوں کہ مرکزی رویت رویت ہلال کمیٹی کوٹی اے ڈی اے مل جائے گا جبکہ مسجدقاسم علی خان کے خطیب مفتی شہاب الدین پوپلزئی نے اپنے 29روزے مکمل ہونے پر24جون کو اپنااجلاس طلب کرلیاہےاوریہ اجلاس کے پی کے گیارہ اجلاسوں میں منعقدہوں گے مفتی شہاب الدین پوپلزئی نے اوصاف سے گفتگوکرتے ہوئے کہاہے کہ ہمارااجلاس اپنے طریقہ کارکے مطابق ہے کیوں کہ 24جون کو ہمارے 29روزے مکمل ہوجائیں گے ہم چانددیکھیں گے اگرعیدکاچاندنظرآگیاتو25جون کوہماری عیدہوگی اگرہمیں عیدکے چاندکے حوالے سے کوئی شہادت موصول نہ ہوئی توپھرہمارے تیس روزے مکمل ہوں گے اور26جون کو عیدہوگی انہوں نے کہاکہ وفاقی حکومت اورمرکزی رویت ہلال کمیٹی نے ابھی تک مجھ سے کوئی رابطہ نہیں کیاہے البتہ میں سرکاری کمیٹی کودعوت دیتاہوں کہ وہ چوبیس جون کوہمارے اجلاس میں شرکت کریں ورنہ اگرچوبیس کوچاندنظرآنے کی صورت میں پچیس کوہماری عیدہوئی توسرکاری کمیٹی کاپشاورمیں اجلاس عیدملن پارٹی بن جائے گا وفاقی حکومت کارویہ غیرسنجیدہ ہے ہم پورے سال چانددیکھنے کااہتمام کرتے ہیں اورکے پی کے 11اضلاع میں چانددیکھنے کااہتمام کیاجاتاہے ۔دوسری طرف محکمہ موسمیات نے عیدالفطرکاچاند25جون کونظرآنے کی پیشن گوئی کردی ہے اس حوالے سے محکمہ موسمیات نے وزارت مذہبی امور کو خط لکھ دیا:محکمہ موسمیات کا عید کے چاند سے متعلق خط وزارت مذہبی امور کو موصول ہوگیاہے خط محکمہ موسمیات کے ڈائریکٹر کلائمیٹ کی جانب سے ڈی جی ریسرچ وزارت مذہبی امور کو لکھا گیاہے وزارت مذہبی امورنے محکمہ موسمیات کاخط رویت ہلال کمیٹی کوبھیج دیاہے رویت ہلال کمیٹی کااجلاس پچیس جون کوپشاورمیں ہوگا محکمہ موسمیات کے مطابق شوال کے چاند کی پیدائش 24جون کو صبح 7 بجکر31 منٹ پرہو جائیگی سائنس کی رو سے شوال کا چاند 25 جون کی شام دکھائی دے دے سکے گاملک کے زیادہ ترحصوں میں25جون کوموسم صاف یاجزوی ابرالودرہیگا،محکمہ موسمیات کے مطابق شوال کاچاند 25 جون کو نظر آنے کے واضح امکانات ہیںشوال کی چاند کی عمر25 جون کو غروب آفتاب کیوقت 36گھنٹوں سے زائدہوگی سائنس کے ڈیٹا کے مطابق عید الفطر 26 جون بروزپیر کو ہو گی

Write on جمعرات, 22 جون 2017

کراچی: پراسیکیوٹر جنرل سندھ نےذوالفقار مرزا بریت کیس میں حکومت کی پیروی کرنے والی خاتون وکیل کو معطل کردیا ہے۔

 تفصیلات کے مطابق گزشتہ ہفتے کار سرکار مداخلت کیس میں سابق وزیرداخلہ سندھ کو بری کئے جانے پر پراسیکیوٹر جنرل سندھ حرکت میں آگئے ہے اور انہوں نے حکومت کی پیروی کرنے والی خاتون وکیل کو معطل کردیا ہے۔ زرائع کے مطابق خاتون وکیل پر الزام ہے کہ انہوں نے کیس کی ٹھیک طریقے سے پیروی نہیں کی۔ جس کے باعث زوالفقار مرزا کو فائدہ حاصل ہوا اور وہ کارسرکار مداخلت کیس میں بری ہوگئے تھے۔واضح رہے کہ گزشتہ ہفتے سندھ ہائی کورٹ نے عدم ثبوت کے باعث سابق وزیر داخلہ کو کار سرکار مداخلت کیس میں بری کردیا تھا۔ ان پر الزام تھا کہ انہوں نے بکتر بند گاڑی پر کھڑے ہوکر اپنے حامیوں سے خطاب کیا تھا اور انہیں صحافیوں پر حملے کرنے پر اکسایا تھا۔ واضح رہے کہ ڈاکٹر ذوالفقار مرزا کے خلاف عدالت کے باہر انیس مئی کو بکتر بند گاڑی پر چڑھنے کا مقدمہ تھانہ آرام باغ میں درج تھا
صفحہ نمبر 1 ٹوٹل صفحات 1056


Read Basharat Online

 

 

PentaBuilders

روزنامہ بشارت ٹویٹر


Follow Daily_Basharat on Twitter

تازہ ترین خبریں

کالم / بلاگ