ہیڈلائنز

Reporter HH

Write on جمعہ, 23 جون 2017

اسلام آباد: سابق وزیر داخلہ رحمان ملک پاناما کیس کی تحقیقات کرنے والی جے آئی ٹی کے سامنے پیش ہو گئے۔
رحمان ملک کا جے آئی ٹی کے سامنے پیش ہونے سے قبل جوڈیشل اکیڈمی کے باہر میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہنا تھا کہ آج جے آئی ٹی کے سامنے بطور سابق ایڈیشنل ڈائریکٹر ایف آئی اے پیش ہو رہا ہوں، لوگ کہتے تھے کہ جے آئی ٹی کے سامنے پیش نہیں ہوں گا لیکن آج تمام ثبوتوں کے ساتھ پیش ہو گیا ہوں۔ ان کا کہنا تھا کہ حدیبیہ پیپر مل کیس کے حوالے سے اپنی رپورٹ کو تسلیم کرتا ہوں، اپنے دور میں جو بھی تحقیقات کیں وہ ذاتی حیثیت میں نہیں بلکہ سرکاری سطح پر کیں اور اس وقت کے صدر کو لکھے گئے خطوط اور ثبوت بھی جے آئی ٹی کے سامنے پیش کروں گا۔

Write on جمعہ, 23 جون 2017

کوئٹہ: جی پی او چوک پر رکن صوبائی اسمبلی مجید خان اچکزئی کی گاڑی کی ٹکر سے ٹریفک اہلکار جاں بحق ہوگیا۔
کوئٹہ کے جی پی او چوک پر ٹریفک سارجنٹ سب انسپکٹر حاجی عطااللہ اپنے فرائض انجام دے رہا تھا کہ پیچھے سے آنے والی گاڑی نے اسے کچل ڈالا۔ حاجی عطااللہ کو اسپتال لے جایا گیا لیکن وہ دوران علاج دم توڑ گیا۔
حادثے کی سی سی ٹی وی فوٹیج کےمطابق گاڑی پشتونخوا میپ کے رکن بلوچستان اسمبلی مجید خان اچکزئی کی ہے جو کہ پشتونخوا ملی عوامی پارٹی کے سربراہ محمود خان اچکزئی کےقریبی عزیز بھی ہیں۔
پولیس نے ابتدا میں گاڑی کو قبضے میں لینے کا دعویٰ کیا تھا تاہم اب اس معاملے کو دبانے اور ملزم کو بچانے کے لیے مقدمہ نامعلوم افراد کے خلاف درج کرلیا گیا ہے۔

Write on جمعہ, 23 جون 2017

دنیا بھر کی طرح پاکستان میں بھی جمعۃ الوداع انتہائی عقیدت و احترام کے ساتھ منایا گیا۔
ملک بھر میں جمعۃ الوداع مذہبی عقیدت و احترام کے ساتھ منایا جا رہا ہے اور اس موقع پر جمعہ کی نماز میں پاکستان کی ترقی، خوشحالی اور سلامتی کے لئے خصوصی دعائیں مانگی گئیں۔ ملک کے سب سے بڑے شہر کراچی میں جمعۃ الوداع کے سب سے بڑے اجتماع نیو میمن مسجد بولٹن مارکیٹ، مدنی مسجد عزیز آباد، کنز الایمان مسجد گرو مندر، فیضان مدینہ پرانی سبزی منڈی اور گلزار حبیب سولجر بازار میں ہوئے۔
وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں جمعۃ الوداع کا بڑا اجتماع فیصل مسجد میں ہوا جہاں بڑی تعداد میں لوگوں نے نماز جمعہ ادا کی۔ لاہور میں نماز جمعہ کی ادائیگی کے بڑے اجتماع مسجد الشہدا اور بادشاہی مسجد میں ہوئے۔ اس موقع پر پاکستان کی سلامتی اورامت مسلمہ کے لئے خصوصی دعائیں بھی کی گئیں۔ روزہ دار رمضان المبارک کی پرکیف ساعتوں کی رخصتی کے خیال سے آبدیدہ ہوگئے۔

Write on جمعہ, 23 جون 2017

کوئٹہ: جناح چیک پوسٹ اور آئی جی آفس کے قریب دھماکے سے پولیس اہلکاروں سمیت 12 افراد جاں بحق اور متعدد زخمی ہوگئے۔
کوئٹہ میں جناح چیک پوسٹ اور آئی جی آفس کے قریب شہدا چوک میں دھماکے سے 3 پولیس اہلکاورں سمیت 12 افراد جاں بحق اور 20 افراد زخمی ہو گئے۔ دھماکا اس قدر شدید تھا کہ اس کی آواز کئی کلو میٹر تک سنی گئی اور دھماکے سے قریبی عمارتوں کے شیشے بھی ٹوٹ گئے۔
دھماکے کے نتیجے میں محکمہ تعلیم کی عمارت کو نقصان پہنچا جبکہ ایک گاڑی مکمل طور پر تباہ ہو گئی جس کے بارے میں امکان ظاہر کیا جا رہا ہے کہ اسی گاڑی میں بارودی مواد رکھا گیا تھا۔
عینی شاہدین کا کہنا ہے کہ دھماکا صبح ساڑھے 8 بجے کے قریب ہوا، دھماکے کی جگہ پر عام دنوں میں کافی رش ہوتا ہے لیکن آج صوبائی حکومت کی جانب سے یوم القدس اور جمعتہ الوداع کے موقع پر عام تعطیل کا اعلان کیا گیا تھا جس کی وجہ سے رش کافی کم تھا۔ دھماکے کے فوری بعد ہر طرف افراتفری پھیل گئی اور لوگوں میں خوف و ہراس پھیل گیا۔
ترجمان بلوچستان حکومت انوارالحق کاکڑ سے بات کرتے ہوئے بتایا کہ سیکیورٹی انتہائی سخت تھی اور جب اہلکاروں نے گاڑی کو روکا تو اس سے بارودی مواد سے بھری گاڑی کو دھماکے سے اڑا دیا۔ ان کا کہنا تھا کہ دھماکے کا خدشہ موجود تھا جس کی وجہ سے سیکیورٹی ہائی الرٹ تھی لیکن فوری طور پر یہ نہیں کہا جا سکتا کہ دھماکے کا ہدف کیا تھا۔
ڈی آئی جی کوئٹہ عبدالرزاق چیمہ نے صحافیوں سے بات کرتے ہوئے کہا کہ پولیس اہلکاروں نے جان پر کھیل کر کوئٹہ کو بڑی تباہی سے بچایا، اہلکاروں کے گاڑی کو روکتے ہی دھماکا ہو گیا جس کے نتیجے میں دو گاڑیاں تباہ ہوئیں لیکن ابھی اس بات کا تعین کر رہے ہیں کہ دھماکا خیز مواد کس گاڑی میں موجود تھا۔ جاں بحق ہونے والے پولیس اہلکاروں کی شناخت لال خان، غنی خان اور ساجد کے ناموں سے ہوئی ہے۔
امدادی ٹیموں کے اہلکاروں نے دھماکے میں زخمی ہونے والوں کو فوری طور پر سول اور دیگر قریبی اسپتالوں میں منتقل کر دیا ہے جہاں انہیں طبی امداد فراہم کی جا رہی ہے جبکہ سیکیورٹی فورسز نے علاقے کا محاصرہ کر کے شواہد اکٹھے کرنا شروع کر دیئے ہیں۔
صدر ممنون حسین نے کوئٹہ میں ہونے والے دہشت گردی کے واقعہ کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے جاں بحق افراد کے اہلخانہ سے ہمدردی کا اظہار کیا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ دہشت گرد آخری سانسیں لے رہے ہیں جبکہ ریاست عوام کے جان و مال کا تحفظ یقینی بنائے گی۔

Write on ھفتہ, 17 جون 2017

اسلام آباد: وزیراعظم نوازشریف اوران کے صاحبزادوں کے بعد وزیراعلیٰ پنجاب شہبازشریف بھی پاناما جے آئی ٹی کے سامنے پیش ہوگئے ہیں۔
وزیراعلی پنجاب شہبازشریف نے پاناما جے آئی ٹی کے سامنے پیش ہونے سے قبل وزیراعظم نوازشریف اوروفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثارعلی خان سے ملاقات کی۔ جس میں پاناما جے آئی ٹی کی جانب سے اٹھائے جانے والے ممکنہ سوالوں کے جواب سے متعلق مشاورت کی گئی۔ بعد ازاں شہباز شریف چوہدری نثار علی خان کے ہمراہ کسی بھی سرکاری پروٹوکول کے بغیر جوڈیشل اکیڈمی پہنچے.
شہباز شریف کی پیشی کے موقع پرجوڈیشل اکیڈمی کے اطراف سیکیورٹی انتہائی سخت ہے، اکیڈمی کے اطراف پولیس کے 2500 اہلکار تعینات ہیں، مسلم لیگ (ن) کے کارکنوں سمیت کسی بھی غیر متعلقہ شخص کو جوڈیشل اکیڈمی کے قریب جانے نہیں دیا جارہا۔

Write on ھفتہ, 17 جون 2017

کراچی: رینجرزنے شہرقائد میں یوم علی کے موقع پردہشتگردی کا منصوبہ ناکام بنا تے ہوئے 4  دہشتگرد گرفتارکرلیے۔

 رینجرزنے کراچی میں بلدیہ اوراورنگی ٹاؤن کے علاقوں میں یوم علی کے موقع پردہشت گردی کا بڑا منصوبہ ناکام بناتے ہوئے 4 دہشتگردوں کوگرفتارجب کہ ان کے قبضے سے خود کش جیکٹ ، بارود اوراسلحہ برآمد بھی برآمد کیا گیا ہے۔

ترجمان رینجرزکے مطابق چاروں دہشت گردوں کا تعلق لشکرجھنگوی سے ہے جو جلوس پرخودکش حملہ کرنا چاہتے تھے۔ دوسری جانب رینجرزنے عوام سے اپیل بھی کی ہے کہ وہ کسی بھی مشکوک شخص یا کسی بھی مشکوک سرگرمی کے بارے میں فوری طورپر1101 پراطلاع دیں۔

Write on ھفتہ, 17 جون 2017

اسلام آباد: وزیرمملکت برائے اطلاعات مریم اورنگزیب کا کہنا ہے کہ نوازشریف کی بنائی سڑکوں  پرپھرنا عمران خان کی بدقسمتی ہے۔

اسلام آباد میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے مریم اورنگزیب کا کہنا تھا کہ نوازشریف پاکستان کے تیسری مرتبہ منتخب ہونے والے وزیراعظم ہیں، ان کا احتساب پرویزمشرف اور پیپلز پارٹی کے دور میں بھی ہوا اور وہ ہمیشہ سرخرو ہوئے ہیں ۔ امید ہے کہ 2018 کے عوامی احتساب میں بھی ہم سرخرو ہوںگے، آئین، اور قانون کے احترام میں جے آئی ٹی میں پیش ہونا نواز شریف کے لیے فخر کی بات ہے۔

مریم اورنگزیب کا کہنا تھا کہ شریف خاندان کے جے آئی ٹی کے حوالے سے تحفظات آئینی اور قانونی ہیں، امید ہے کہ سپریم کورٹ نوٹس لےکر ہمارے تحفظات دور کرے گی،جس کے خلاف بھی کرپشن کے مقدمات ہیں سپریم کورٹ ان پر تیزی سے فیصلہ دے۔ نوازشریف کی بنائی گئی سڑکوں پرپھرناعمران خان کی بدقسمتی ہے۔ عمران خان خود انسداد دہشت گردی عدالت اور الیکشن کمیشن سےبھاگے ہوئے ہیں لیکن وہ تاثر دے رہے تھے کہ شریف خاندان تحقیقاتی عمل کو مکمل نہیں ہونے دے گی لیکن انہوں نے آئینی اور قانونی راستہ اختیارکیا۔

Write on ھفتہ, 17 جون 2017

 اسلام آباد: وفاقی انٹیلی جنس ادارے آئی بی کے ڈائریکٹرجنرل آفتاب سلطان نے پاناما جے آئی ٹی ارکان کے کوائف اکٹھے کرنے کا اعتراف کرلیا ہے۔ وفاقی انٹیلی جنس ادارے آئی بی کے ڈائریکٹرجنرل آفتاب سلطان نے سپریم کورٹ میں جمع کرائے گئے جواب میں پاناما جے آئی ٹی ارکان کے کوائف اکٹھے کرنے کا اعتراف کیا ہے۔

آفتاب سلطان نے اپنے جواب میں کہا ہے کہ آئی بی سرکاری اعلی عہدوں پرتعینات سرکاری ملازمین کا ڈیٹا اکٹھا کرتی ہے، پاناما کیس بڑا اہم اوراس کے ملکی سیاست پر بڑے اثرات پڑرہے ہیں۔ اس لیے وفاقی انٹیلی جنس ادارے نے جے آئی ٹی ارکان کے کوائف جمع کیے تاہم جے آئی ٹی کے کسی بھی رکن کوحراساں یا ان کی نجی زندگی میں مداخلت نہیں کی گئی۔

صفحہ نمبر 1 ٹوٹل صفحات 164


Read Basharat Online

 

 

PentaBuilders

روزنامہ بشارت ٹویٹر


Follow Daily_Basharat on Twitter

تازہ ترین خبریں

کالم / بلاگ